دنیا

التاجی فوجی اڈے پر راکٹ حملے میں ہمارے 3 فوجی زخمی ہوئے ہیں۔ امریکہ کا اعتراف

شیعت نیوز: عراقی دارالحکومت بغداد کے شمال میں واقع امریکی اتحاد کے التاجی فوجی اڈے پر ہفتے کے روز دسیوں کتیوشا میزائلوں سے ہونے والے نامعلوم حملے کے حوالے سے امریکی وزارت خارجہ نے پینٹاگون سے جاری ہونے والے اپنے مختصر بیان میں کہا ہے کہ التاجی فوجی اڈے پر راکٹ حملے میں صرف 3 امریکی فوجی زخمی ہوئے ہیں۔

امریکی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ زخمی ہونے والے 3 امریکی فوجیوں میں سے 2 کی حالت تشویشناک ہے جنہیں بغداد میں موجود ایک فوجی ہسپتال میں داخل کر لیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : عراق :التاجی امریکی فوجی اڈے پر پھر شدید کتیوشا راکٹوں سے حملہ

ماہرین کے مطابق امریکہ کی طرف سے تاجی فوجی اڈے پر ہفتے کے روز ہونے والے راکٹ حملے میں صرف 3 فوجیوں کے زخمی ہونے کا بیان حقائق کے خلاف اور مضحکہ خیز ہے کیونکہ اس حملے میں 30 سے زائد کتیوشا راکٹ فائر کئے گئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں : عراقی فوج کی مشترکہ کمان کا امریکہ کے ساتھ تعاون نہ کرنے کا فیصلہ

گزشتہ ہفتے بدھ کے روز ہونے والے حملےجس میں صرف 16 کتیوشا راکٹس امریکی فوجی اڈے پر داغے گئے تھے۔جس میں 3 امریکی و برطانوی فوجیوں کے ہلاک ہونے کے ساتھ ساتھ 12 تا 14 دوسرے فوجی زخمی بھی ہوئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں : عراق: التاجی فوجی اڈے پر اپنے فوجیوں کی ہلاکت پر امریکہ کا رد عمل

واضح رہے کہ تین دن قبل بھی تاجی میں امریکی فوجی اڈے کو نشانہ بنایا گیا تھا جس میں 3 امریکی اور ایک برطانوی فوجی ہلاک اور 12 سے زائد زخمی ہوئے تھے جس کے بعد امریکی فوج نے بھی اگلے ہی روز عراقی رضاکار فورس حشد الشعبی کے مراکز پر بم گرائے تھے جس میں 3 افراد شہید اور متعدد زخمی ہوئے تھے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close