اہم ترین خبریںپاکستان

شہید علی رضا عابدی کے قتل میں ملوث 4 اشتہاری ملزمان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری دوبارہ جاری

خیال رہے کہ پولیس کے انسداد دہشت گردی ڈپارٹمنٹ نے علی رضا عابدی کے قتل کیس میں 4 ملزمان محمد فاروق، عبدالحسیب، محمد غزالی اور ابوبکر کو گرفتار کیا تھا جبکہ ان کے دیگر 4 ساتھیوں، بلال، حسنین، فیضان اور غلام مصطفیٰ کو اشتہاری قرار دیا گیا تھا۔

شیعت نیوز: کراچی کی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے شیعہ سیاسی رہنما سیدعلی رضا عابدی کے قتل میں مبینہ طور پر ملوث 4 اشتہاری ملزمان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری دوبارہ جاری کردیئے۔

خیال رہے کہ پولیس کے انسداد دہشت گردی ڈپارٹمنٹ نے علی رضا عابدی کے قتل کیس میں 4 ملزمان محمد فاروق، عبدالحسیب، محمد غزالی اور ابوبکر کو گرفتار کیا تھا جبکہ ان کے دیگر 4 ساتھیوں، بلال، حسنین، فیضان اور غلام مصطفیٰ کو اشتہاری قرار دیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:شہید علی رضا عابدی کی ٹارگٹ کلنگ کیلئے قاتلوں کو 8لاکھ روپے دیئے جانے کا انکشاف

علی رضا عابدی، جو سابق رکن قومی اسمبلی اور معروف کاروباری شخصیت بھی تھے، کو 25 دسمبر 2018 کو کراچی کے علاقے ڈیفنس میں ان کی رہائش گاہ کے سامنے مسلح افراد نے فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا۔

سینٹرل جیل میں کیس کی آج (بروز ہفتہ) ہونے والی سماعت میں انسداد دہشت گردی عدالت کے جج کے سامنے کیس کے تفتیشی افسر نے رپورٹ پیش کرتے ہوئے بتایا کہ 4 اشتہاری ملزمان کو گرفتار نہیں کیا جاسکا۔

یہ بھی پڑھیں:علی رضا عابدی قتل اور مفتی تقی عثمانی حملہ کیس میں سپاہ صحابہ کےبدنام زمانہ رہنما تاجی کھوکھرکا بیٹا گرفتار

تفتیشی افسر نے بتایا کہ ملزمان کی گرفتاری کے لیے کوششیں کی جارہی ہیں اور عدالت سے ملزمان کو گرفتار کرنے اور انہیں عدالت میں پیش کرنے کے لیے مزید مہلت دینے کی استدعا کی۔

عدالت نے تفتیشی افسر کی درخواست منظور کرتے ہوئے اشتہاری ملزمان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری دوبارہ جاری کردیئے۔کیس کی آئندہ سماعت 31 مئی کو ہوگی۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close