عراق

امریکہ، حشد الشعبی سے انتقام لینے کے درپے ہے۔ کمانڈر علی الحسینی

شیعت نیوز : عراق کی عوامی رضا کار فورس حشد الشعبی کے کمانڈر علی الحسینی نے کہا ہے کہ امریکہ اور اس کے اتحادی، حشد الشعبی سے انتقام لینے کے درپے ہیں۔

فارس خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق عراق کی عوامی رضا کار فورس حشد الشعبی کے کمانڈر علی الحسینی نے کہا ہے کہ بعض عرب اور یورپی ممالک، ذرائع ابلاغ میں پروپگنڈوں اور فتنہ و فساد کے ذریعے حشد الشعبی کو کمزور کرنا چاہتے ہیں اس لئے کہ حشدالشعبی نے عراق کے حصے بخرے کرنے سے متعلق ان کی سازش کو ناکام بنا کر دہشت گرد گروہ داعش کا اس ملک سے خاتمہ کردیا۔

حشدالشعبی کے کمانڈر علی الحسینی نے عراقی حزب اللہ کے جوانوں کی گرفتاری اور رونما ہونے والے حالیہ واقعات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ 3 روز سے حشد الشعبی کے خلاف بعض عرب اور یورپی ممالک نے ذرائع ابلاغ میں جنگ شروع کی ہے اور حشد الشعبی کے خلاف من گھڑت اور جھوٹے دعوے کر کے استقامتی محاذ کے جوانوں کے خون کو پامال کرنا چاہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : عراقی سیکورٹی فورس کا کامیاب آپریشن، داعش کا سرغنہ ہلاک، 14 گرفتار

علی الحسینی کا کہنا تھا کہ امریکہ کی تمام سازشیں ناکام ہو جائیں گی اور غاصبوں اور جارحین کو اس ملک سے بالآخر نکلنا پڑے گا۔

واضح رہے کہ دہشت گرد امریکی فوجیوں نے انسداد دہشت گردی فورس کی حمایت سے چالیس بکتر بند گاڑیوں کے ہمراہ بغداد کے الدورہ علاقے میں قائم حزب اللہ عراق کے دفتر پر حملہ کرکےاس تنظیم کے 13 جوانوں کو اغوا کر لیا۔

جس کے بعد الحشد الشعبی کے جوان بغداد کے انتہائی سیکورٹی والے علاقے گرین زون میں داخل ہوگئے اور خبردار کیا کہ اگر حزب اللہ کے اغوا کئے گئے جوانوں کو رہا نہ کیا گیا تو وہ دہشت گرد امریکیوں کے خلاف ہمہ گیر جنگ شروع کردیں گے۔

دہشت گرد گروہوں کے مقابلے میں عراق کی عوامی رضاکار فورس حشدالشعبی کی کامیابیوں کے بعد امریکہ اور صیہونی حکومت نے عراق کے مختلف علاقوں میںحشدالشعبی کے مراکز کو کئی بار اپنے حملوں کا نشانہ بنایا ہے اور اس طرح عراق میں دہشت گرد گروہوں کو ایک بار پھر دہشت گردانہ کارروائیاں تیز کرنے کے لئے اکسانے کی ناکام کوشش کی ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close