مقبوضہ فلسطین

امریکہ کا شرمناک طور پر کورونا کا استعمال، غزہ پر بمباری

شیعت نیوز : فلسطین کی تحریک جہاد اسلامی نے ایران اور دیگر ممالک پر امریکہ کی نئی شرمناک پابندیوں کی مذمت کی ہے۔ دوسری طرف اسرائیلی فوج نےغزہ کی پٹی میں متعدد مزاحمتی مراکز پر بم باری کی۔

تحریک جہاد اسلامی فلسطین نے ایک بیان جاری کر کے اعلان کیا ہے کہ امریکہ ، دنیا بھر میں کورونا پھیلنے اور اس کے سخت نتائج سے نہایت شرمناک طور پر ناجائز فائدہ اٹھا رہا ہے اور ایران کا اقتصادی محاصرہ سخت کرنے اور پابندیاں بڑھانے میں مصروف ہے۔

یہ بھی پڑھیں : امریکی حکومت کورونا وائرس کے مقابلے میں ناتواں ہے۔ سید حسن نصر اللہ

تحریک جہاد اسلامی نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ امریکی پالیسیاں دشمنانہ اور انسانی اقدار و اخلاق سے عاری ہیں اور یہ سب کچھ ایسے عالم میں ہو رہا ہے کہ جب دنیا اور انسانیت کو کورونا کے بڑے چیلنج کا مقابلہ کرنے کے لئے سیاسی اختلافات کو بالائے طاق رکھنے اور یکجہتی پیدا کرنے کی ضرورت ہے۔

امریکہ کی وزارت خارجہ نے چھبیس مارچ کو ایران سے متعلق پانچ اداروں اور پندرہ شخصیات پر پابندیاں عائد کردی ہیں اور دعوی کیا ہے کہ یہ پابندیاں دہشت گردی کے خلاف جد و جہد کے تناظر میں لگائی گئی ہیں۔

گذشتہ ہفتوں سے ایران اور دنیا بھر کے ممالک میں کورونا وائرس پھیلنے کے بعد بین الاقوامی اداروں کے علاوہ ترکی، چین، روس اور پاکستان جیسے مختلف ممالک کے حکام نے ایران کے خلاف امریکہ کی یکطرفہ اور غیرقانونی پابندیوں کی منسوخی کا مطالبہ کیا ہے۔

دوسری طرف اسرائیلی فوج نےغزہ کی پٹی میں متعدد مزاحمتی مراکز پر بم باری کی جس کے نتیجے میں متعدد عمارتوں اور دیگراملاک کو نقصان پہنچا۔

مقامی فلسطینی ذرائع کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج کے ایک ڈرون طیارے نے شمال فلسطین میں ایک مزاحمتی مرکز پرتین میزائل گرائے۔

ادھر شمال مشرقی غزہ میں جبالیا کے مقام پر ایک مزاحمتی مرکز پر توپ کے دو گولے داغے جس کے نتیجے میں کمپائونڈ کو نقصان پہنچایا۔

ادھر اسرائیلی فوج کے ترجمان کا کہنا ہے کہ جمعرات کے روز غزہ کی پٹی سے صیہونی کالونیوں پر متعدد راکٹ داغے گئے تھے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close