لبنان

امریکہ کی مزاحمتی تحریک حزب اللہ لبنان پر پابندی کی کوشش شروع

شیعت نیوز: امریکہ، لبنان کی اسلامی مزاحمتی تحریک حزب اللہ اور اس کے اتحادیوں پر پابندی عائد کرنے کی کوشش میں ہے۔

فارس نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق مغربی ایشیا کے امور میں امریکہ کے عہدیدار ڈیوڈ شینکر نے اسلامی مزاحمتی تحریک حزب اللہ لبنان اور اس کے اتحادیوں پر زیادہ سے زیادہ دباش ڈالنے کی بات کہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : عراق: سید الشہداء بریگیڈ کی بڑی دھمکی، ایک بھی امریکی فوجی بچنا نہیں چاہئے

انہوں نے کہا کہ مستقبل قریب میں حزب اللہ اور اس کے اتحادیوں پر پابندیاں عائد کی جا سکتی ہیں۔

اب تک امریکی وزارت خزانہ، حزب اللہ لبنان کے اراکین اور اس سے وابستہ کچھ تنظیموں اور اداروں پر پابندیاں عائد کر چکا ہے۔

واضح رہے کہ مشرق وسطیٰ میں دہشت گرد گروہ داعش کے مقابلے میں حزب للہ کی مسلسل کامیابیوں کے بعد سے ہی امریکہ اور صیہونی حکومت نے حزب اللہ لبنان پر زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کی پالیسی شروع کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : اقوام متحدہ اسرائیل کو مقبوضہ علاقے خالی کرنے کا پابند بنائے۔ لبنانی وزیر اعظم

واشنگٹن میں اسلامی مزاحمتی تحریک حزب اللہ لبنان کی محبوبیت کو کم کرنے کے لئے متعدد سطحوں پر کام شروع کر دیا گیا ہے۔

امریکہ نے ایران کے خلاف زیادہ سے زیادہ دباؤ برقرار رکھنے کی پالیسی کے تحت اس کی آلہ کار تنظیموں پر بھی پابندیاں عائد کرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔ حزب اللہ پر یہ نئی پابندیاں اسی سلسلے کی کڑی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : ناصبی اوریا مقبول جان اور اورنگزیب فاروقی کی حضرت عمر بن عبدالعزیز کی قبر کی بے حرمتی پر فرقہ وارانہ سازش ناکام

واضح رہے کہ امریکہ نے 2017ء میں حزب اللہ کودہشت گردی کی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کاالزام لگا کر بلیک لسٹ قراردیا تھا اور اس سے وابستہ کارکنان ، لیڈروں اور اداروں پر پابندیاں عائد کرنا شروع کی تھیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close