دنیا

امریکہ نے جنرل قاسم سلیمانی کو قتل کرکے عالمی قوانین کو پامال کیا۔ اقوام متحدہ

شیعت نیوز: اقوام متحدہ کی نمائندہ رپورٹر کا کہنا ہے کہ امریکہ نے سپاہ اسلام کے عظيم کمانڈر شہید میجر جنرل قاسم سلیمانی کو قتل کرکے عالمی قوانین کی صریح خلاف ورزی کا ارتکاب کیا ہے۔

اقوام متحدہ کی نمائندہ رپورٹر اگنیس کیلامارڈ نے بی بی سی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جنرل قاسم سلیمانی کے قتل سے ایک نئی بدعت کی شروعات ہوئی ہے جو مستقبل میں ایک بحران کی شکل اختیار کر سکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : علامہ راجہ ناصرعباس کی متولی حرم امام رضاؑ علامہ احمد مروی سے ملاقات، شہید قاسم سلیمانی کی تعزیت

انہوں نے کہا کہ امریکہ نے سردار قاسم سلیمانی کو قتل کرکے عالمی سطح پر فوجی کارروائی سے استفادہ کے معیاروں کی بھی خلاف ورزی کا ارتکاب کیاہے۔

اس سے قبل روس، چین ، ترکی اور دیگر ممالک بھی شہید سلیمانی کے بزدلانہ قتل کو امریکہ کی کھلی دہشت گردی قراردے چکے ہیں۔

سپاہ قدس کے ہر دل عزیزکمانڈر  قاسم سلیمانی اور الحشد الشعبی کے ڈپٹی کمانڈرابو مہدی المہندس، اپنے ساتھیوں کے ہمراہ تین جنوری کو بغداد ایئرپورٹ کے قریب امریکی دہشت گردوں کے ایک فضائی حملے میں شہید ہوگئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں : ترک صدر کےدورہ پاکستان کے پیچھے چھپےخطرناک حقائق، حیرت انگیز انکشاف

اس دہشت گردانہ حملے کے بعد امریکی وزارت جنگ پینٹاگون نے اعلان کیا تھا کہ جنرل قاسم سلیمانی کو شہید کرنے کے لئے خود صدر ٹرمپ نے براہ راست آپریشن کا حکم دیا تھا۔

واضح رہے کہ جنرل قاسم سلیمانی خطے میں سرگرم تکفیری دہشت گردوں منجملہ داعش سے مقابلے کے میدان میں ایک نمایاں ترین کمانڈر تھے جنہوں نے خطے میں امریکی سازشوں کی ناکامی اور عراق و شام میں داعش کو شکست سے ہمکنار کرنے میں کلیدی کردار ادا کیا۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close