مشرق وسطی

امریکہ نے ہمیں شامی تیل کی تنصیبات تباہ کرنے کی تربیت دی ہے۔ شامی باغیوں کا اعتراف

شیعت نیوز : شام میں گرفتار ہونے والے شامی باغیوں نے اعتراف کیا ہے کہ انہیں امریکی فوجیوں کی طرف سے شامی تیل کی تنصیبات اور انفراسٹرکچر کی تباہی کے لئے باقاعدہ تربیت دی گئی ہے۔

ترک خبر رساں ایجنسی آناتولیہ (Anadolu) نیوز نے لکھا ہے کہ شام و روس دوستی تنظیم کے سربراہ ’’اولگ گراولی اوف‘‘ نے خبرنگاروں کو بتایا کہ ہتھیار ڈال دینے والے شامی باغیوں نے اعتراف کیا ہے کہ انہیں امریکی فوجیوں کی طرف سے شام کے تیل کی تنصیبات اور انفراسٹرکچر تباہ کرنے کی باقاعدہ تربیت دی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : شام کے صوبے الحسکہ میں کار بم دھماکے میں ترکی کے فوجی ہلاک

روس شام دوستی تنظیم کے سربراہ نے کہا ہے کہ گرفتار ہونے والے شامی دہشت گردوں نے اعتراف کیا ہے کہ انہیں شامی افواج کے زیرکنٹرول علاقوں میں دہشت گردانہ کارروائیاں انجام دینے کے لئے امریکہ کی طرف سے خصوصی ہدایات دی جاتی تھیں۔

شام و روس دوستی تنظیم کے سربراہ اولگ گراولی اوف نے میڈیا کو بتایا کہ ہتھیار ڈالنے والے شامی دہشت گردوں نے امریکہ کی طرف سے مہیا کئے گئے امریکی اسلحے کے ذخائر بھی حکومت کے حوالے کر دیئے ہیں۔

ترک خبر رساں ایجنسی کے مطابق اولگ گراولی اوف نے بتایا کہ ہتھیار ڈالنے والے دہشت گردوں نے اطلاع دی ہے کہ انہوں نے 2 روز قبل (14 اپریل کو) شامی علاقے التنف میں موجود امریکی فوجی اڈے کے اندر واقع دہشت گرد کیمپ کو ترک کرنے کی کوشش تھی، جس پر وہاں موجود امریکی حمایت یافتہ دہشت گردوں نے ان پر حملہ کر دیا۔

روسی ذرائع کے مطابق 2 روز قبل امریکی فوجی اڈے کے اندر موجود دہشت گرد کیمپ میں ہونے والی مسلح لڑائی میں متعدد دہشت گرد ہلاک ہوگئے تھے جبکہ وہاں سے فرار کرنے والے 27 دہشت گردوں کو شامی فورسز نے گرفتار کر لیا ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close