عراق

امریکی فوجی اتحاد کے خلاف عراقی عوام کی نو سو سے زائد شکایات

شیعت نیوز: عراق کے تین صوبوں کے عوام نے امریکہ کی سرکردگی میں قائم فوجی اتحاد کے خلاف نو سو سے زائد شکایت عراقی Provحکومت کو جمع کرا دی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : عراق کےمختلف صوبوں میں داعشی دہشت گردوں کے خلاف نئی کارروائیاں

عراق کے اعلی انسانی حقوق کمیشن کے رکن علی البیاتی کے جاری کردہ بیان کے مطابق امریکہ کی سرکردگی میں قائم نام نہاد داعش مخالف امریکی فوجی اتحاد کے حملوں میں مرنے والوں کے لواحقین کی جانب سے نو سو چھبیس شکایات حکومت کو موصول ہوچکی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : عالمی استکبار کا مقصد جوانوں کو اسلامی نظام سے الگ کرنا ہے۔ آیت اللہ خامنہ ای

انہوں نے کہا کہ یہ شکایات صوبہ الانبار، نینوا اور کرکوک سے موصول ہوئی ہیں اور ان میں آدھی سے زیادہ درخواستیں امریکی فوجی اتحاد کے حملوں میں زخمی ہونے والوں اور یا پھر مرنے والوں کے لواحقین نے خود دائر کی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : عراق دوسرے ممالک کے خلاف جارحیت کا اڈہ نہیں بنے گا۔ عراقی وزیرخارجہ

امریکہ کی سرکردگی میں قائم نام نہاد داعش مخالفت اتحاد نے گزشتہ دنوں اعتراف کیا تھا کہ عراق اور شام میں اس کے فضائی حملوں میں تقریبا میں ایک ہزار تین سو ستر عام شہری مارے جا چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : شام: دمشق کے قریب تکفیریوں سے واپس لیے گئے علاقے میں اجتماعی قبر دریافت

آزاد ذرائع کا کہنا ہے کہ عراق اور شام میں امریکی فوجی اتحاد کے حملوں میں گیارہ ہزار آٹھ سو کے قریب عام شہری ہلاک اور آٹھ ہزار سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close