ایران

امریکی امپریالزم کی ہڈیوں کے ٹوٹنے کی آواز آنے لگی ہے۔ جنرل ابوالفضل شکارچی

شیعت نیوز: ایرانی فوج کے ترجمان ابوالفضل شکارچی نے امریکہ میں رونما ہونے والے حالیہ واقعات کو امریکہ کی کھوکھلی طاقت کے زوال کی واضح علامت بتاتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی امپریالزم کی ہڈیوں کے ٹوٹنے کی آواز سنائی دینے لگی ہے۔

بریگیڈیر جنرل ابوالفضل شکارچی نے امریکی صدر کے نسل پرستانہ رویے اور سیاہ فام امریکی شہریوں کے خلاف اس ملک کی پولیس کے غیر انسانی تشدد کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کی سامراجی حکومت نے، انسانی حقوق کے اپنے جھوٹے نعروں کے برخلاف، آج کل عوامی احتجاج کو کچلنے اور انتہائی پر تشدد رویہ اختیار کر کے اپنے کریہہ اور غیر انسانی چہرے کو پہلے سے زیادہ نمایاں کر دیا ہے اور جھوٹی جمہوریت کی بنیادوں کو ہلا دیا ہے۔

ابوالفضل شکارچی نے کہا کہ ایسے عالم میں کہ جب ان دنوں امریکہ کے سامراجی نظام کو ملک گیر احتجاج اور بدامنی کا سامنا ہے، وائٹ ہاؤس کے سرغنہ، اپنی مداخلت پسندانہ پالیسیاں جاری رکھ کرخطے اور دنیا میں بہت سے بحرانوں کا سبب بنے ہوئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : پولیس کے ہاتھوں سیاہ فام شہری کابہیمانہ قتل، امریکہ میدان جنگ بن گیا

واضح رہے کہ امریکہ کی مینے سوٹا ریاست کے مینیاپولیس شہر کے لوگ، امریکہ کے ایک سفید فام پولیس افسر کے ہاتھوں ایک سیاہ فام شہری جارج فلوئیڈ کو قتل کیے جانے کے خلاف گزشتہ منگل سے سراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں اور مسلسل سڑکوں پر مظاہرے کر رہے ہیں۔

ایرانی فوج کے ترجمان ابوالفضل شکارچی نے اسی طرح ایرانی پولیس کے بعض افسران کے نام پابندیوں کی فہرست میں شامل کرنے کے امریکی وزارت خزانہ کے مضحکہ خیز اقدام کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی کارروائیوں سے، جو واشنگٹن کی شکست کی غمازی کرتی ہیں، امریکہ کی سامراجی اور تسلط پسندانہ فطرت کا مقابلہ کرنے کے ایران کے عوام اور حکام کے عزم میں ذرہ برابر بھی خلل پیدا نہیں ہوگا۔

دوسری جانب ایران کے وزیر خارجہ نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں امریکہ میں سیاہ فام شہری کے سفید فام امریکی پولیس آفیسر کے ہاتھوں بہیمانہ قتل کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اب وہ وقت آگیا ہے کہ دنیا نسل پرستی کے خلاف متحد ہوجائے۔

رپورٹ کے مطابق ایران کے وزیر خارجہ نے اپنے امریکی ہم منصب کے گزشتہ دوسال پہلے کے ٹوئٹر پیغام کو ایڈیٹ کرتے ہوئے کہا کہ اب وہ وقت آگیا ہے کہ دنیا نسل پرستی کا مقابلہ کرے۔

ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے 27 جون 2018ء کو امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپیو کی جانب سے ایران مخالف بیان کی تصویر کو شیئر اور امریکی عوام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ کچھ لوگ سیاہ فاموں کی جان کی قدر و قیمت اور اہمیت کے بارے میں نہیں سوچتے تاہم جو سیاہ فاموں کی زندگی کی اہمیت کو سمجھتے ہیں انھیں جاننا ہوگا کہ اب وہ وقت آگیا ہے کہ دنیا نسل پرستی کے خلاف متحد ہو کر اس کا مقابلہ کرے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close