دنیا

امریکی پابندیوں کے باعث حزب اللہ اور زیادہ طاقتور ہوگی، روسی سفیر زاسیپکن

شیعت نیوز : لبنان میں تعینات روسی سفیر زاسیپکن کا کہنا ہے کہ امریکی پابندیوں سے لبنان کے حالات مزید خراب ہوں گے تاہم حزب اللہ پر اس کا نتیجہ بر عکس ہوگا۔

ان کا کہنا ہے کہ امریکی پابندیوں کے باعث حزب اللہ کمزور ہونے کے بجائے اور زیادہ طاقتور ہوگا۔

حزب اللہ لبنان کے سیکریٹری جنرل نے جمعے کی اپنی تقریر میں یہ کہا تھا کہ امریکہ لبنانی عوام سے دشمنی کر رہا ہے اور اس نے پابندیاں لگا کر لبنان کے سبھی عوام کو نشانہ بنایا ہے جبکہ اندرون ملک صرف حزب اللہ ہی ہے جو امریکہ کی دشمن شمار ہوتی ہے۔

روسی سفیر زاسیپکن کا یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب گزشتہ منگل کے روز بیروت بندرگاہ پر ہونے والے ہولناک دھماکے نے پورے لبنان کو ہلا کر رکھ دیا اور اس سانحے میں کم از کم ایک سو اٹھاون افراد جاں بحق جبکہ قریب چھے ہزار زخمی ہو گئے۔

یہ بھی پڑھیں : ولایت سے دوری امت اسلامیہ کی مشکلات کا بنیادی سبب ہے، سربراہ انصار اللہ

معیشتی مشکلات کے ساتھ ساتھ دھماکے سے ہونے والی تباہی کے باعث لبنانی عوام میں خاصی ناراضگی پیدا ہو گئی ہے اور دشمن قوتیں بالخصوص امریکی حکومت اس موقع سے بھرپور فائدہ اٹھانے کی کوشش کر رہی ہیں۔ بیرونی قوتوں کے آلہ کار عوام کو یہ باور کرانے کی کوشش کر رہے ہیں کہ حال ہی میں بر سر اقتدار آنے والی حساب دیاب کی حکومت ان مشکلات کا باعث بنی ہے۔

مغرب نواز سیاسی تنظیم چودہ مارچ کے حامیوں نے گزشتہ روز بیروت کی سڑکوں پر نکل کر حکومتی اداروں اور بینکوں کو نشانہ بنایا اور شہر میں بلوا کھڑا کرنے کی کوشش کی۔ یہ مظاہرے پر تشدد رہے اور ان کے دوران ایک پولیس اہلکار جاں بحق اور ایک سو اسی افراد زخمی ہو گئے۔

لبنان کی وزارت داخلہ اور فوج کے ہیڈکواٹر سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ عوام کی ناراضگی قابل درک ہے مگر مظاہرین تشدد اور پبلک پراپرٹی کو نقصان پہونچانے سے پرہیز کریں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close