اہم ترین خبریںپاکستان

قرنطینہ کی مدت پوری ہونے کے باوجود زائرین کوگھروں کو جانے کی اجازت نہ دینا انتہائی زیادتی ہے،علامہ عارف واحدی

مگر انتظامیہ نے اپنی یقین دہانیوں کے برعکس زائرین کو ان کے متعلقہ اضلاع میں قرنطینہ سنٹر بنا کر نظر بند کر دیا

شیعت نیوز: شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ عارف حسین واحدی نے صوبائی صدر علامہ سید سبطین حیدر سبزواری سے زائرین سے متعلق حالیہ صورتحال پر گفتگو کرتے کہاکہ زائرین کو تفتان کے بعد ملتان سمیت دیگر قرنطینہ سینٹرز میں رکھا گیا، حالانکہ ابتدائی طور پر بنیادی سہولیات تک نہیں تھیں، مشکل صورتحال کے پیش نظر وفاقی و صوبائی حکومتوں کیساتھ نچلی سطح تک مکمل تعاون کرتے رہے ہیں، مگر اس کے باوجود طبی، حفاظتی اقدامات اور قرنطینہ کی دوہری مدت پوری کرنے کے باوجود زائرین کو ان کے گھروں میں جانے سے روکا جا رہا ہے، زائرین کیساتھ اس طرح کا ناروا سلوک اور میڈیا ٹرائل ناقابل قبول ہے، ایسی صورتحال برقرار رہی اور تحفظات دور نہ کئے گئے تو ذمہ دار انتظامیہ اور حکومت خود ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں: پنجاب میں متاثرہ مریضوں کی کل تعداد 1133، اکثریت تبلیغیوں کی ہے، وزیر اعلیٰ پنجاب

علامہ عارف حسین واحدی نے کہا کہ علامہ سید ساجد علی نقوی کی ہدایات، مسلسل رہنمائی، نگرانی کی روشنی میں جو اقدامات اٹھائے گئے، ہمارے علاوہ مرکزی نائب صدر و مسئول امور شعبہ زائرین علامہ مظہر عباس علوی، صوبائی صدر جنوبی پنجاب علامہ موسیٰ رضا جسکانی اور ان کی ٹیم کے اعلیٰ سطحی، ڈویژنل و مقامی انتظامیہ سے رابطوں کے سبب 1160 زائرین ملتان قرنطینہ سنٹر سے گذشتہ شام اپنے اپنے اضلاع کو روانہ کر دیئے گئے تھے، جبکہ انتظامیہ نے روانگی کے وقت اس امر کی یقین دہانی کروائی تھی کہ زائرین کو ان کے گھروں میں پہنچایا جائے گا، مگر انتظامیہ نے اپنی یقین دہانیوں کے برعکس زائرین کو ان کے متعلقہ اضلاع میں قرنطینہ سنٹر بنا کر نظر بند کر دیا، جو صریحاً ناانصافی ہے، کیونکہ یہ زائرین تفتان اور ملتان سنٹرز میں ایک ماہ 7 دن گزار چکے ہیں، جو مطلوبہ مدت سے ڈیڑھ گنا زیادہ ہے۔ ملتان سنٹر میں ان زائرین کی ٹیسٹ رپورٹس بھی نیگیٹو آئی تھیں، اس کے باوجود ان کو گھروں کو نہ بھجوانا ظلم و زیادتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: آئی ایس او کراچی نے کورونا سے جابحق افراد کی تجہیز وتکفین کا مکمل انتظام کیا ہے، محمد عباس

انہوں نے کہا کہ قرنطینہ کی دہری مدت پوری کرنے اور انتظامیہ کیساتھ مکمل تعاون کے باوجود زائرین کو ان کے گھروں کو جانے کی اجازت نہ دینا انتہائی زیادتی ہے، ہم نے روز اول سے کہا تھا کہ کورونا کے اس انسانی المیے سے نمٹنے کیلئے حکومت سمیت ہر ادارے اور ہر سطح پر مکمل تعاون کیلئے نہ صرف تیار ہیں بلکہ عملی طور بھی متحد ہوکر اس سے نمٹیں گے، ہماری اس حوالے سے نہ صرف رضاکارانہ سرگرمیاں جاری ہیں بلکہ مذہبی اجتماعات سمیت دیگر تمام اہم فیصلوں پر حکومت کا ساتھ دیا ہے، مگر افسوس زائرین سے متعلق ہمارے تحفظات تاحال مکمل دور نہیں کئے گئے، اب بھی سینکڑوں زائرین صحت مند قرار دیئے جانے کے باوجود گھروں کو روانہ نہیں کئے جا سکے۔ انہوں نے کہاکہ زائرین کیساتھ اس طرح کا ناروا سلوک اور میڈیا ٹرائل ناقابل قبول ہے، ایسی صورت حال برقرار رہی اور تحفظات دور نہ کئے گئے تو ذمہ دار انتظامیہ اور حکومت خود ہوگی۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close