اہم ترین خبریںدنیا

عاشورا پر حسینی عزاداروں پر نائیجیرین سکیورٹی فورسز کا حملہ، تین شہید

شیعیت نیوز : نائیجیریا کے شمال میں واقع شہر کدونا میں سکیورٹی فورس نے یوم عاشورا پر حسینی عزاداروں پر حملہ کر کے تین سوگواروں کو شہید کر دیا۔

العالم کی رپورٹ کے مطابق نائیجیریا کی سیکورٹی فورس کے حملوں کے باوجود اس ملک کے حسینی عزاداروں نے شہدائے کربلا کا غم نہایت عقیدت اور مذہبی جوش و جذبے کے ساتھ منایا۔ خیال رہے سکیورٹی فورس کی جارحیت میں تین عزادار شہید اور کئی زخمی ہو گئے۔

یہ بھی پڑھیں : دمبالو، جلوس عاشوراء روکنے کیلیے پولیس نے مرکزی امام بارگاہ کو گھیرلیا

حکومت نائیجیریا کی جانب سے عائد کردہ بندشوں کے باوجود اس ملک کے عزاداروں نے زاریا، کدونا اور سوکوتو میں جلوس عزا نکالے اور سڑکوں پر ماتم کر کے شہدائے کربلا کے غم میں اشک غم بہائے۔

نائیجیریا کے عزاداروں نے غاصب صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات کی شدید مخالفت کا بھی اظہار کیا۔

یہ بھی پڑھیں : یوم عاشورا دس محرم اجر رسالت کی ادائیگی کا دن

ان حسینی عزاداروں نے شہدائے کربلا کی یاد میں اور نواسہ رسول حضرت امام حسین (ع) کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے نائیجیریا کے اسپتالوں میں جاکر اپنے خون کے عطیات پیش کئے اور حکومت سے نائیجیریا کی اسلامی تحریک کے رہنما آیت اللہ ابراہیم زکزکی کی رہائی کا مطالبہ کیا۔

واضح رہے کہ حالیہ دنوں کے دوران نائیجیریا کی سیکورٹی فورس اور فوج نے حسینی عزاداروں کے خلاف مختلف قسم کی بندشیں عائد کرنے کے علاوہ ان کے خلاف تشدد و جارحیت کا عمل تیز کر دیا ہے۔

یاد رہے کہ نائجیریا کی فوج نے زاریا میں بقیۃ اللہ امام بارگاہ پر حملہ کرکے شیخ ابراہیم زکزکی اور ان کی اہلیہ کو زخمی کرکے گرفتار کرلیا اس حملے میں شیخ زکزکی کی ایک آنکھ مکمل طور پر ضائع ہوگئی جبکہ دوسری آنکھ کی بینائی بھی ختم ہورہی ہے ۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close