مقبوضہ فلسطین

آتشی پتنگوں اور غباروں سے صیہونیوں کو مزہ چکھائیں گے، فلسطینی تنظیم

شیعت نیوز : فلسطین کی عوامی مزاحمتی تنظم کی ایک فوجی شاخ نے اعلان کیا ہے کہ صیہونی بستیوں کی طرف آتشیں مواد کے حامل پتنگوں اور غباروں کو چھوڑے جانے کا سلسلہ پھر شروع کیا جائے گا۔

فارس خبر رساں ایجنسی کے مطابق فلسطین کی مزاحمتی تنظیم کی فوجی شاخ ناصر صلاح الدین بٹالینز نے اعلان کیا ہے کہ غاصب صیہونی حکومت کو برتری یا نیا توازن مسلط کرنے کی ہرگز کوئی اجازت نہیں دی جائے گی۔

مزاحمتی بیٹیلیئن نے اعلان کیا ہے کہ تحریک مزاحمت کے جوان صیہونی فوجیوں کی جارحیت کا بھرپور اور منھ توڑ جواب دیں گے۔

یہ بھی پڑھیں : لاہور، سی ٹی ڈی نے خودکش حملہ آور گرفتار کرلیا

غاصب صیہونی حکومت کے ٹینکوں نے پیر کی صبح غزہ میں فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے ٹھکانوں پر گولہ باری کی ہے۔ غاصب صیہونیوں کا کہنا ہے کہ یہ حملہ مقبوضہ علاقوں سے ملنے والی غزہ کی پٹی پر فلسطینیوں کے اجتماع اور مقبوضہ علاقوں کی طرف آتشیں مواد کے حامل پتنگوں اور غباروں کو چھوڑے جانے کے جواب میں کیا گیا ہے۔

فلسطینی جوانوں نے گزشتہ دنوں کے دوران غزہ کے صیہونی محاصرے کے خلاف احتجاج کے طور پر غزہ سے ملنے والے مقبوضہ علاقوں کی طرف آتشیں مواد کے حامل غبارے اور پتنگیں چھوڑی تھیں۔

دوسری جانب قدس کے مفتی نے ایک فتوی جاری کر کے قدس شہر میں عرب امارات کے شہریوں کے داخلے اور مسجد الاقصی میں ان کی نماز کی ادائیگی پر پابندی عائد کر دی ہے۔

قدس اور فلسطین کے مفتی اعظم شیخ محمد حسین نے کہا ہے کہ 2012 میں جو فتوی جاری ہوا تھا اس میں قدس شہر اور مسجد الاقصی میں داخلے کیلئے اسرائیل کے ساتھ ساز باز نہ کرنے پر زور دیا گیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ اب چونکہ عرب امارات نے اسرائیل کے ساتھ معاہدہ کر ہی لیا ہے، اس لئے عرب امارات کے شہریوں کے داخلے اور مسجد الاقصی میں ان کی نماز کی ادائیگی پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

فلسطین کے مفتی اعظم شیخ محمد حسین کا کہنا تھا کہ اسرائیل کے ساتھ ساز باز کرنے کے دائرے میں قدس کا سفر حرام ہے اس لئے کہ یہ سینچری ڈیل میں شمار ہوتا ہے اور سینچری ڈیل بیت المقدس کو فلسطینیوں سے ہتھیانے کیلئے ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close