پاکستان

قتل و غارت، ڈکیتی اور لوٹ مار کی وارداتیں قانون کی عمل داری پر سوالیہ نشان ہیں،علامہ باقر زیدی

تحریک انصاف کی ”تبدیلی“ کے نعرے کو حوصلہ افزا تب ہی قرار دیا جا سکتا ہے کہ جب ملک میں بسنے والوں کا نظام زندگی بہتر ہوتا دکھائی دے۔

شیعت نیوز: مجلس وحدت مسلمین سندھ کے سیکریٹری جنرل علامہ باقر عباس زیدی نے کہا ہے کہ ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی اور بے روزگاری نے عام آدمی کیلئے شدید مشکلات کھڑی کر دیں ہیں، موجودہ صورتحال میں متوسط طبقہ سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے، تحریک انصاف کی ”تبدیلی“ کے نعرے کو حوصلہ افزا تب ہی قرار دیا جا سکتا ہے کہ جب ملک میں بسنے والوں کا نظام زندگی بہتر ہوتا دکھائی دے۔

یہ بھی پڑھیں: عراقی وزیر اعظم عادل عبد المہدی نے اپنے اقتدار کہ خلاف سازش کیسے کی ؟

اپنے ایک بیان میں علامہ باقر زیدی نے کہا کہ پڑھے لکھے نوجوانوں کو ملازمتوں کی فراہمی ریاست کی ذمہ داری ہے، جس کے لیے بلاتاخیر ضروری اقدامات اٹھانے ہوں گے، محض خوشنما نعروں سے عوام کو خوش نہیں کیا جا سکتا، ملک میں پڑھے لکھے افراد کو روزگار کی عدم فراہمی ان کے خاندانوں کیلئے بے چینی میں اضافہ کا باعث ہے،جسے دور کرنا ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں: کالعدم سپاہ صحابہ کی شیعہ وائس چانسلر کےخلاف نفرت انگیز مہم ، ریاست تماشائی

علامہ باقر زیدی نے کہا سندھ سمیت ملک کے مختلف حصوں میں لاقانونیت کے بڑھتے ہوئے واقعات نے عدم تحفظ کے احساس میں اضافہ کیا ہے، قتل و غارت، ڈکیتی اور لوٹ مارکی آئے روز وارداتیں قانون کی عمل داری پر سوالیہ نشان ہیں، جرائم کے واقعات میں تیزی امن و امان قائم کرنے والے اداروں کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

یہ بھی پڑھیں: چوبرجی دھماکے میں ملوث کالعدم سپاہ صحابہ کے دہشتگرد کا خاکہ تیار کر لیا گیا

انہوں نے کہا کہ ایسے واقعات سے حکام بالا کی چشم پوشی مجرمانہ غفلت کے زمرے میں آتی ہے، جو نامناسب ہے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ عوام کے مسائل کے حل اور بنیادی حقوق پر خصوصی توجہ دی جائے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close