دنیا

بھارتی فوج کی ریاستی دہشتگردی، ماتمی جلوس پر آنسو گیس کا استعمال

شیعیت نیوز : مقبوضہ کشمیر میں محرم الحرام کے جلوسوں پر پابندی عائد کرکے عزاداروں کے ماتمی جلوس پر آنسو گیس کا استعمال کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق کشمیری ذرائع کے حوالےسے خبر دی ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جانب سے ایک بار پھر محرم الحرام کے جلوس نکالنے پر پابندی کا اعلان کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ انتظامیہ کی جانب سے چار دیواری کے اندر چھوٹی چھوٹی مجالس کی اجازت دی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : لبنان: بیروت میں داعش کا حملہ ناکام، سرغنہ گرفتار

مقبوضہ کشمیر میں نکالے گئے محرم کے پر ماتمی جلوس پر بھارتی فوج کی جانب سے لاٹھی چارج اور آنسو گیس کا استعمال کیا گیا۔ جس کی وجہ سے متعدد عزادار زخمی ہو گئے۔

عزاداروں کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے چار دیواری کے اندر مجالس کرنا ممکن نہیں ہے اور حکومت باہر سڑکوں اور گلی کوچوں میں مجالس کی اجازت نہیں دے رہی۔

کشمیر کی جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس نے محرم الحرام کے موقع پر نکالے جا رہے جلوسوں اور عزاداروں کے خلاف طاقت کا بے تحاشا استعمال کرنے اور انہیں گرفتار کر کے تھانوں میں بند کرنے کو مداخلت فی الدین سے تعبیر کرتے ہوئے سرکاری اقدامات کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

نیشنل کانفرنس کے ترجمان عمران نبی ڈار نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ جس طرح سے کل بڈگام کے علاوہ دیگر مقامات پر عزاداروں کے خلاف طاقت کا استعمال، ٹیئر گیس شیلنگ اور فائرنگ کی گئی وہ ناقابل قبول ہے۔

انہوں نے بڈگام میں کرفیو کے نفاذ اور گھر سے باہر نکلنے والوں کو زد و کوب کرنے کے واقعات کی بھی شدید الفاظ میں مذمت کی اور کہا کہ ایسے اقدامات کے منفی نتائج سامنے آنے کے قوی امکانات ہیں۔

بعض دریگر ذرائع کی رپورٹوں کے مطابق کشمیر کے ضلع بڈگام میں جمعرات کو انتظامیہ کی طرف سے دوبارہ پانچ روزہ لاک ڈاؤن کے نفاذ کے احکامات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے کری پورہ اور پاٹواؤ علاقوں میں جلوس عزا برآمد ہوئے عزاداران سید الشہداء نے نوحہ خوانی اور سینہ زنی کی اور امام بار گاہ بڈگام میں پرامن طریقے سے ماتمی جلوس اختتام پذہر ہوئے۔

سرینگر کے ایک مضافاتی علاقے میں جلوس کے دوران آزادی کا نعرہ لگانے والے نوجوانوں کے خلاف تھانہ پارمپورہ میں مقدمہ درج کر کے بھارتی فوجی اہلکاروں نے دو نوجوانوں کو گرفتار کر لیا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close