دنیا

چین، اٹلی کے بعد امریکہ کورونا وائرس سے متاثرہ تیسرا بڑا ملک قرار

شیعت نیوز: چین اور اٹلی کے بعد اب امریکہ کورونا وائرس سے متاثرہ تیسرا بڑا ملک بن گیا ہے۔

کورونا وائرس 189 ملکوں تک پھیل گیا جس سے 15ہزار سے زائد افراد ہلاک جبکہ تقریباً 3 لاکھ سے زائد متاثر ہو چکے ہیں۔

عالمی میڈیا کے مطابق اٹلی میں کورونا سے سب سے زیادہ ہلاکتیں ہوئیں اور گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران اٹلی میں کورونا وائرس مزید 651 زندگیاں لے گیا،اس طرح مجموعی طور پر اٹلی میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 6078 ہوگئی۔اور اس ملک میں کورونا سے اب تک63927 افراد متاثر ہو چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : کورونا وائرس پاکستان میں کون لایا!؟

اسپین میں بھی 375 افراد کی جان چلی گئی، اور اس طرح مجموعی طور پر اموات کی تعداد 1700 سے بڑھ گئی۔

فرانس میں مزید 112ہلاکتوں کے بعد مجموعی تعداد 674 تک پہنچ گئی جبکہ برطانیہ میں 281 اور امریکہ میں 557 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

ایران بھی کورونا وائرس سےمتاثر ہوا ہے تاہم ایرانی قوم کورونا کو شکست دینے کی بھر پور کوشش کر رہی ہے۔

امریکہ میں گزشتہ روز تک 13 ہزار 931 نئے کیسز آنے سے وہاں مجموعی طورپر 43 ہزار 847 متاثرین کی تصدیق ہو چکی ہے۔

سی ایس ایس ای کے مطابق امریکہ کورونا وائرس (کووڈ -19) کے معاملے روزبروز بڑھتے ہی جا رہے ہیں اور اب تک اس وبا سے ملک میں 557 افراد کی موت ہو چکی ہے۔

امریکہ میں وائرس سے متاثرہ 708 افراد کی حالت نازک ہے اور سانس کی اس مہلک بیماری سے 396 افراد پہلے ہی دم توڑ چکے ہیں جن میں 94 نئی اموات بھی شامل ہیں۔

مختلف امریکی ٹیلی ویژن چینلز پر طبی ماہرین نے متنبہ کیا کہ متاثر افراد کی کل تعداد زیادہ ہوسکتی ہے کیونکہ کورونا وائرس سے متاثرہ افراد علامات کے باوجود اپنی بیماری ظاہر نہیں کر رہے۔

دوسری جانب امریکی حکومت نے نیو یارک، کیلیفورنیا، ایلی نوائے اور اوریگون ریاستوں میں گھروں میں رہنے کا آرڈر جاری کردیا۔

امریکہ کی 50 ریاستوں میں 7 کروڑ اور پوری دنیا میں ایک ارب سے زائد لوگ اس وائرس کے خوف میں مبتلا ہیں۔

اس وائرس کے خوف نے ریاستہائے متحدہ میں 70 ملین سے زیادہ اور پوری دنیا میں ایک ارب سے زیادہ افراد کو متاثر کیا ہے۔

خیال رہے کہ کورونا وائرس کا اب تک کوئی علاج منظور نہیں ہوا ہے لیکن محقیقن پہلے سے موجود علاج کے طریقوں پر تحقیق کر رہے ہیں اور تجرباتی علاج پر کام کر رہے ہیں، زیادہ تر مریضوں کو صرف معاون طبی سہولت فراہم کی جا رہی ہے۔

عالمی ادارہ برائے صحت ’’ڈبلیو ایچ او‘‘ کے مطابق تقریباً 80 فیصد مریض بیرونی مدد کے بغیر صحت یاب ہوئے ہیں۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close