دنیا

چین کا بڑا اقدام، امریکی قونصل خانہ بند کرنے کا حکم دے دیا

شیعت نیوز : امریکہ کی جانب سے ہیوسٹن میں چینی قونصلیٹ بند کیے جانے کے چند گھنٹوں بعد چین نے چینگ ڈو میں امریکی قونصل خانہ بند کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق چین کی وزارت خارجہ نے آج جمعہ کے روز چینگ ڈو شہر میں امریکی قونصل خانہ بند کرنے کا حکم دے دیا۔ چینی وزرات خارجہ نے کہا ہے موجودہ صورت حال کا ذمہ دار امریکہ ہے۔

چین کی وزرات خارجہ کا کہنا ہے کہ چین نے یہ اقدام ہیوسٹن میں امریکہ کی طرف سے چین کا قونصل خانہ بند کرنے کے بعد اٹھایا۔

چینی وزارت خارجہ نے کہا کہ چین امریکہ تعلقات کی موجودہ صورتحال وہ نہیں ہے جو چین دیکھنا چاہتا ہے بلکہ چین امریکہ تعلقات کی موجودہ صورتحال کا ذمہ دار امریکہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں : پنجاب کاتحفظ بنیاداسلام قانون آئین پاکستان سے متصادم

امریکہ اور چین میں تجارتی جنگ کے بعد سفارتی محاذ آرائی شدت اختیار کر گئی ہے۔

واضح رہے کہ امریکہ نے ہیوسٹن میں چینی قونصلیٹ کو بند کیا تھا جس پر چین کا اب یہ رد عمل سامنے آیا ہے۔

ادھر امریکہ میں تین چینی شہریوں کو گرفتار کر لیا گیا، ان پر ویزا فراڈ اور چینی افواج کے ساتھ وابستگی کا الزام ہے۔

دوسری جانب امریکی ایف بی آئی نے مشتبہ چینی سائنسدان کے سان فرانسسکو کے چینی قونصل خانے میں چُھپے ہونے کی اطلاع دی ہے، چینی سائنسدان پر ویزا میں فراڈ اور فوج سے روابط چھپانے کا شبہ کیا جا رہا ہے۔

ہیوسٹن میں چین کا قونصل خانہ بند کرنے کے بعد چینی سائنسدان کے سان فرانسسکو قونصل خانے میں چھپے ہونے کی خبر نے امریکہ چین کشیدگی کو بڑھاوا دیا ہے۔

امریکی پراسیکیوٹر کے مطابق کیلیفورنیا میں بائیولوجی کی چینی محقق کار تینگ جوآن نے ایف بی آئی کو انٹرویو میں چینی فوج سے روابط کے متعلق جھوٹ بولا تاہم جب تینگ جوآن کی چینی فوجی وردی میں تصاویر اور دیگر شواہد سامنے آئے تو تینگ جوآن چینی قونصل خانے میں روپوش ہو گئیں۔

امریکی اہلکاروں کا کہنا ہے کہ یہ معاملہ چین کے اس پروگرام کا حصہ ہے جس کے تحت وہ چینی سائنسدانوں کو امریکی معلومات چوری کرنے کے لیے خفیہ طور پر امریکہ بھیجتا ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close