اہم ترین خبریںپاکستان کی اہم خبریں

کوسٹل ہائی وے پر کالعدم تکفیری دہشتگردوں کےساتھ جھڑپ ، 14 سکیورٹی اہلکار شہید

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ او جی ڈی سی ایل کا قافلہ سیکیورٹی فورسز کی حفاظت پر گوادر سے کراچی جارہا تھا۔

شیعیت نیوز: کالعدم تکفیری وہابی دہشت گرد تنظیم کالعدم لشکر جھنگوی کے دہشت گردوں کے ساتھ جھڑپ میں سکیورٹی فورسز کے 14 اہل کارجام شہادت نوش کرگئے، دہشت گردوںں کو بھی شدید جانی نقصان اٹھانا پڑا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق اورماڑہ میں کوسٹل ہائی وے پر سیکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں میں جھڑپ اس وقت ہوئی جب دہشتگردوں نے او جی ڈی سی ایل کے قافلے پر حملہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں: امت واحدہ کےقرآنی تصور کو عملی طور پر اجاگر کرنے کیلئےعالم اسلام پیغمبرختمی مرتبتؐ اورامام حسن مجتبیٰؑ کی سیرت طیبہ پر عمل پیراہو،علامہ ساجدنقوی

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق،مقامی ذرائع کا کہنا ہے کہ گزشتہ روز کوسٹل ہائی وے پر سیکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان جھڑپ میں 14 سیکیورٹی اہلکار شہید ہوگئے جبکہ دہشتگردوں کو شدید جانی نقصان کا سامنا کرنا پڑا۔

سیکیورٹی فورسز نے حملہ ناکام بناتے ہوئے او جی ڈی سی ایل کے اہلکاروں کو بحفاظت نکال لیا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ او جی ڈی سی ایل کا قافلہ سیکیورٹی فورسز کی حفاظت پر گوادر سے کراچی جارہا تھا۔

ترجمان کے مطابق بلوچستان کی اقتصادی ترقی میں رکاوٹ ڈالنے والوں کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے، ایسی بزدلانہ کارروائیوں سے سیکیورٹی فورسز کا عزم بلند ہوتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: سندھ حکومت کی عزاداروں پر قائم بےبنیادمقدمات کے خاتمےکی یقین دہانی ،شیعہ علماءواکابرین کا 16اور 18اکتوبر کا احتجاج موخر کرنے کا اعلان

آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کرسرچ آپریشن کررہی ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق شہید ہونیوالے 7جوانوں کا تعلق ایف سی بلوچستان اور7سیکیورٹی گارڈز شامل ہیں، شہدا میں محمد فواد اللہ، عطااللہ، وارث خان، عبدالنافع، شاکر اللہ اور عابد حسین شامل ہیں۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ شہدا میں لائس نائیک عبداللطیف، سپاہی محمد وارث، سپاہی عمران خان، حوالدار (ر) سمندر خان، صوبیدار عابد حسین، نائیک محمد انور، لانس نائیک افتخار احمد اور سپاہی محمد نوید شامل ہیں۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close