لبنان

’’سینچری ڈیل‘‘ کےمقابلےمیں فلسطینی مزاحمت کی حمایت کااعلان

.
لبنان میں عرب پاپولر فورم کے زیراہتمام منعقدہ کانفرنس میں امریکہ کے ’’سینچری ڈیل‘‘ منصوبے کے مقابلے کے لیے فلسطینی مزاحمت کی حمایت کا اعلان کیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق بیروت میں منعقدہ کانفرنس کے آخر میں ’’اعلان بیروت ۔ صدی کی ڈیل کے خلاف سب ایک ہیں‘‘ کے عنوان سے جاری اعلامیے میں امریکی سازشی منصوبے کے خلاف اگلے مرحلے کےلیے ایکشن پیرپروگرام کا اعلان کیا گیا۔

قبل ازیں کانفرنس کے شرکاء نے امریکا کے ’’سینچری ڈیل‘‘ منصوبے سے نمٹنے اور اسے ناکام بنانے کے لیے مختلف آپشنز پرغور کیا گیا۔ کانفرنس میں صدی کی ڈیل کے خلاف ہونے والے سابقہ اقدامات، موجودہ اور آئندہ کے لائحہ عمل پرغور کیا گیا۔

اعلامیے میں کہا گیا کہ کانفرنس فلسطینیوں کی مسلح جدو جہد آزادی سمیت مزاحمت کی تمام اشکال کی حمایت کرتی ہے۔ یہ کانفرنس پوری مسلم امہ، مسلم افواج،تنظیموں، زندہ ضمیر عالم انسانیت سے بھی اپیل کرتی ہے کہ وہ فلسطینیوں کی مزاحمت کی حمایت کریں۔ غزہ میں جاری فلسطینیوں کی حق واپسی تحریک کو مضبوط بنانے اور مسجد اقصیٰ کےدفاع کے لیے صف اوّل میں قربانیاں دینے والے فلسطینیوں کا ساتھ دیں۔

خیال رہے کہ یہ کانفرنس عرب قومی کانفرنس، اسلامی قومی کانفرنس، عرب جنرل پارٹیز کانگرس، بین الاقوامی القدس فاؤنڈیشن اور عرب پروگریسیو فرنت کی دعوت پر بلائی گئی تھی جس میں فلسطین، لبنان اور دوسرے عرب اور مسلمان ممالک کے300 سے زائد مندوبین نے شرکت کی۔

کانفرنس میں عرب ممالک بالخصوص خلیجی ریاستوں کی طرف سے اسرائیل کے ساتھ تعلقات کونارملائز کرنے کی کوششوں کی مذمت کرتے ہوئے عرب ممالک پر زور دیا کہ وہ صیہونی ریاست کے جرائم کی پردہ پوشی کے بجائےمظلوم فلسطینی قوم کا ساتھ دیں۔ نام نہاد اقتصادی منصوبوں اور کانفرنسوں سے مسئلہ فلسطین حل نہیں ہوسکتا بلکہ پوری دنیا میں بالعموم اور مشرق وسطیٰ میں بالخصوص دیرپا امن کے قیام کے لیے فلسطینیوں کو ان کے سلب شدہ حقوق حقوق واپس کرنا ہوں گے۔

کانفرنس میں اسلامی تحریک مزاحمت (حماس) کے سیاسی شعبے کے رکن حسام بدران، لبنان میں حماس کے مندوب احمد عبدالھادی، حماس رہنما علی برکہ، تحریک فتح کی مرکزی کمیٹی کے رکن عزام الاحمد، روحی فتوض اور عباس زکی نے شرکت کی۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close