ایران

دشمن کی سازشوں کو ناکام کرنے کی بھر پور کوشش کررہے ہیں۔ ایرانی وزیر خارجہ

شیعیت نیوز : ایرانی وزیر خارجہ نے ملکی مفادات کی فراہمی کیلئے ہر ممکن کوشش پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ایرانی محکمہ خارجہ کے تمام اراکین، ٹرمپ انتظامیہ اور ناجائز صیہونی ریاست کی سازشوں کو ناکام کرنے کی بھر پور کوشش کر رہے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار محمد جواد ظریف نے آج بروز بدھ کو صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

ایرانی وزیر خارجہ نے کابینہ کے اجلاس میں عدم موجودگی سے متعلق صحافیوں کے سوال کے جواب میں کہا کہ ایک ایسے وقت جب ٹرمپ انتظامیہ اور ناجائز صیہونی ریاست اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف سیاسی، معاشی اور سیکورٹی دباؤ ڈالنے کی بھر پور کوشش کر رہے ہیں تو میں اور محکمہ خارجہ کے دیگر اراکین، ان کی کوششوں کو ناکام کرنے کیلئے دن رات کام کرتے رہتے ہیں۔

ظریف نے کہا کہ انہوں نے محکمہ خارجہ کے دیگر اراکین سیمت، دنیا میں اسلامی جمہوریہ ایران کے نام کو بلند کرنے کیلئے کسی بھی کوشش سے دریغ نہیں کیا ہے اور فعال سفارت کاری سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں دشمنوں کو شکست کا سامنا کیا۔

انہوں نے گزشتہ ہفتے کے دوران، اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں ایران کی تین کامیابیوں کو ایرانی عوام کیلئے ایک قیمتی تحفہ قرار دے دیا۔

ظریف نے اس بات پر زور دیا کہ وہ اس مشکل راستے میں ایرانی قوم کے مفادات کی فراہمی کیلئے ہر ممکن کوشش کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں : ایٹمی معاہدے کے اراکین امریکہ کو اس معاہدے کا شراکت دار نہیں سمجھتے ہیں۔ عباس عراقچی

دوسری جانب ایران کے حکومتی ترجمان نے کہا ہے کہ ہمیں یقین ہے کہ ہمارے عوام پر پابندیوں اور دباؤ کی پالیسی جلد از جلد ناکام ہوگی اور آج سے ہم امریکی حکومت کے رہنماؤں کے چہروں پر شکست اور بے بسی کے آثار دیکھ سکتے ہیں۔

یہ بات علی ربیعی نے منگل کے روز صحافیوں کے ساتھ ایک پریس کانفرنس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ یہ کوئی اتفاق نہیں ہے کہ پومپیو امریکی تاریخ کا سب سے ناکام سکریٹری آف اسٹیٹ ہے اور امریکہ کو یہ جان لینا چاہئے کہ زیادہ سے زیادہ دباؤ کی پالیسی ناکام ہوگئی ہے اور یہ نیا ہتھکنڈہ ہمارے لئے کوئی نئی بات نہیں ہے، امریکی حکومت سلامتی کونسل کے غلط استعمال کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔

ربیعی نے یو اے ای اور صیہونی ریاست کے درمیان تعلقات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہم خطے میں صیہونی ریاست کا پیر کھولنے کیلیے متحدہ عرب امارات کے اقدام کو ایک خطرہ سمجھتی ہیں یہ ہمارے لئے قابل قبول نہیں ہے اور ہم اس موجودگی کی وجہ سے پیدا ہونے والے خطرے کو برداشت نہیں کریں گے۔

انہوں نے ایک ٹرگر میکانزم کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ٹرگر میکانزم یا اسنیپ بیک ایک جعلی لفظ ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close