پاکستان کی اہم خبریں

ایف اے ٹی ایف کی جانب سے پاکستان کو بلیک لسٹ کرنے یا نا کرنے کے حوالے سے اہم فیصلہ سامنے آگیا

ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ بات میرے لیے واضح ہے کہ پاکستان کو بلیک لسٹ نہیں کیا جائے گا

شیعت نیوز: ایف اے ٹی ایف کی جانب سے پاکستان کو بلیک لسٹ کرنے یا نا کرنے کے حوالے سے اہم فیصلہ سامنے آگیا۔فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) پیرس میں ہونے والے سالانہ اجلاس میں پاکستان کو بلیک لسٹ نہیں کرے گا لیکن اسے بدستور نگرانی کی فہرست میں رکھ سکتا ہے۔ یہ بات واشنگٹن کے وڈرو ولسن سینٹر میں امور جنوبی ایشیا کے اسکالر مائیکل کلگیلمن نے کہی۔

مائیکل کلگیلمن کا کہنا تھا کہ پاکستان کو گرے لسٹ سے خارج کرنا ابھی قبل از وقت ہے، اس کا فیصلہ رواں سال بعد میں ہونے والے اجلاس میں کیا جائے گا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ بات میرے لیے واضح ہے کہ پاکستان کو بلیک لسٹ نہیں کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: سعودی ولی عہد بن سلمان کا عمران خان سے وفاقی وزیر علی زیدی کو برطرف کرنے کا مطالبہ

ذرائع کے مطابق اجلاس کا آغاز پیر سے ہو گیا تھا لیکن پلانری سیشن کا اجلاس 19 فروری کو ہو گا جو پاکستان کو گرے لسٹ کے نام سے معروف واچ لسٹ میں رکھنے یا نہ رکھنے کا فیصلہ کرے گا۔

تاہم واشنگٹن کی اٹلانٹک کونسل کے ایک نان ریزیڈینٹ فیلو عذیر یونس کا کہنا تھا کہ اس بات کے اشارے موجود ہیں کہ پاکستان کو ممکنہ طور پر اگر ہفتوں میں نہیں تو آئندہ چند ماہ میں گرے لسٹ سے نکال دیا جائے گا۔ واشنگٹن کے امریکی انسٹیٹیوٹ اؔف پیس میں پاکستان کے حوالے سے منعقدہ ایک سیمنار میں بات کرتے ہوئے انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اس سے مالی سرمایہ کے بہاؤ میں مزید اضافہ ہو گا، جو ملک کی معیشت کے لیے کم از کم مختصر مدت کے لیے اچھا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: فلاح امت کیلئےحضرت فاطمتہ الزہرا ؑکے سیرت و کردار پر عمل پیراہونا ہوگا، وفاقی وزیرمذہبی امور

مائیکل کلگلمین کا کہنا تھا کہ امریکی حکام کو یقین ہے کہ پاکستان نے ایف اے ٹی ایف کے ایکشن پلان کے حوالے سے خاصی پیشرفت کی ہے اور حافظ سعید کو دہشت گردی کی مالی معاونت پر سزا بھی ایف اے ٹی ایف اراکین کے لیے حوصلہ افزا اشارہ ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close