اہم ترین خبریںپاکستان

تکفیریت کی بدترین شکست ، دمبالوبدین میں جلوس عاشورابرآمد، ایم ڈبلیوایم کے رہنماؤں پر مقدمہ درج

مقامی مومنین تو ایک طرف وہاں کی مومنات نے بھی تہیہ کررکھا تھا کہ کسی صورت جلوس عاشورا سے دستبردار نہیں ہوں گے

شیعیت نیوز: نیودمبالو کے یزیدی ایس ایچ او خالد جروار اور وہابی دہشت گردوں کو بدترین شکست ضلع بدین تحصیل دمبالو کے پابرہنہ عاشقان سید الشہداء امام حسین ع کی جانب سے تمام تر رکاوٹوں کو پیروں تلے روندتے ہوئے لبیک یا حسینؑ کی فلک شگاف صداؤں میں جلوس عاشورا برآمد کرنے کے جرم میں مقدمہ درج کرلیاگیاہے، ایم ڈبلیوایم کے صوبائی رہنما یعقوب حسینی سمیت 20 معلوم اور 10نامعلوم عزاداران حسینی ؑ ایف آئی آر میں نامزد ۔

تفصیلات کے مطابق بدین کی تحصیل دمبالو میں کالعدم سپاہ صحابہ کے تکفیری دہشت گردوں اور ان کے سرپرست اعلی ایس ایچ او خالد جروار کی تمام تر کوششوں اور جلوس کے روٹ کی مکمل ناکہ بندی اور گھیراؤ کے باوجودمومنین کی استقامت کے نتیجے میں مرکزی جلوس عاشورہ اپنی مقررہ وقت اور مقام سے مجلس وحدت مسلمین صوبہ سندھ کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل یعقوب حسینی اور دیگر معززین کی قیادت میں بھرپور شان وشوکت کے ساتھ برآمد ہوا ۔

یہ بھی پڑھیں: یزیدملعون کے باپ داداپر لعنت کے جرم میں مقدمہ درج، زیارت عاشورہ پڑھنے والے تقی جعفرگرفتار

جلوس عزا میں عزاداران حسینی ع نے ہزاروں کی تعداد میں شرکت کی جنہوں نے ہاتھوں میں شبیہ علم حضرت عباس ع تھام رکھے تھےاور لبیک یا حسین ع اور نعرہ حیدری کی فلک شگاف صدائیں بلند کررہے تھے، اس موقع پر پولیس کی بھاری نفری بھی موجود تھی۔جلوس اپنی منزل مقصود پر پہنچ کر پر امن انداز میں اختتام پزیر ہوا۔بعد ازاں پولیس نے جلوس عزا برآمد کرنےپر مجلس وحدت مسلمین کے صوبائی ڈپٹی سیکریٹری جنرل یعقوب حسینی ، ضلع ماتلی کے سیکریٹری جنرل پیارعلی کھوسو ،ضلع بھرمیں فعال ایم ڈبلیوایم کےمتعددرہنماؤںسمیت 20 معلوم اور 10 چہرہ شناس افراد کے خلاف تعزیرات پاکستان دفعہ 147 ،149 ،114 ،506،395،511،353،341،453اور 295/A کے تحت مقدمہ درج کرلیاہے۔

پولیس نے ایف آئی آر میں نامزد عزاداروں پر پولیس کے ہتھیار چھینے کی کوشش، دکانداروں اور تاجروں کوکاروبار بندکرنے کیلئے جان سے مارنے کی دھمکیاں دینے جیسے جھوٹے اور بے بنیاد الزامات عائد کیئے ہیں ۔

یہ بھی پڑھیں: عاشورا پر حسینی عزاداروں پر نائیجیرین سکیورٹی فورسز کا حملہ، تین شہید

واضح رہے کہ اس جلوس کو روکنے کے لیئے سعودی نواز وہابی دہشت گرد تنظیم کالعدم سپاہ صحابہ اور ان کا سہولت کار مقامی ایس ایچ او خالد جروار ایڑی چوٹی کا زور لگاتے رہے اور بانیان جلوس پر دباؤ ڈالتے رہے کہ یا تو جلوس ملتوی کردیا جائے یا پھر رات کی تاریکی میں برآ مد کیا جائےچونکہ کالعدم سپاہ صحابہ نے جلوس میں رکاوٹ ڈالنے لیکئے اسی وقت اور اسی جگہ پر کانفرنس کا اعلان کیا ہوا تھا۔

مقامی مومنین تو ایک طرف وہاں کی مومنات نے بھی تہیہ کررکھا تھا کہ کسی صورت جلوس عاشورا سے دستبردار نہیں ہوں گے، دمبالو کے مومنین اور ایم ڈبلیوایم کی مقامی اور صوبائی قیادت نے استقامت کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنے مولا و آقا امام حسین ع سے اپنے عشق کا ثبوت دیا اور تمام تر سازشوں کے باوجود جلوس عاشورا برآمد کرکے دکھایا۔

کالعدم سپاہ صحابہ کے آلہ کار مقامی ایس ایچ او خالد جروار نے بغض اہل بیت ؑ میں جلوس عزاکے خلاف مقدمہ درج کرکے عزاداران حسینی ؑ کو نامزد کیاہے، ملت جعفریہ پاکستان وزیر اعلیٰ سندھ اور آئی جی سندھ سے مطالبہ کرتی ہے کہ فوری طور پرمتعصب ایس ایچ او خالد جروار کو برطرف کرکے گرفتار کیا جائے اور عزاداران حسینی ؑ پر درج مقدمہ فوری خارج کیا جائے ۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close