مقبوضہ فلسطین

غزہ پر جارحیت، صیہونی حکومت کو جہاداسلامی اور حماس کا سخت انتباہ

شیعت نیوز : فلسطین کی تحریک جہاد اسلامی نے صیہونی وزیر اعظم کی بن یامین نتین یاھو کی غزہ پر وسیع حملے کی دھمکی کے جواب میں جہاد اسلامی نے اعلان کیا ہے کہ جارحیت جاری رہنے کی صورت میں تل ابیب پر جہنم کے دروازے کھول دیئے جائیں گے۔

جہاد اسلامی فلسطین کے ترجمان داود شہاب نے غزہ میں اسرائیل کے تازہ جرائم کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے اگر صیہونیوں نے غزہ پر جارحیت بند نہ کی تو اس علاقے کو اسرائیل کے لیے جہنم میں تبدیل کردیا جائے گا۔

داؤد شہاب کا کہنا تھا کہ فلسطینی عوام کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ صیہونیوں کے خلاف تحریک مزاحمت کو جاری رکھیں۔انہوں نے یہ بات زور دے کر کہی کہ فلسطین کی مزاحمتی قوتیں دشمن کی جارحیت کا منھ توڑ جواب دینے کی طاقت رکھتی ہیں اور اس کے نتائج کی تمام تر ذمہ داری اسرائیل پر عائد ہوگی۔

جہاد اسلامی فلسطین کے ترجمان نے کہا کہ صیہونی حکومت غزہ پر حملے سے سیاسی فائدہ اُٹھانے کی کوشش کر رہی ہے لیکن تحریک مزاحمت اسے ناکام بنادے گی۔داؤد شہاب نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ مزاحمتی قوتیں صیہونیوں کو اس بات کی اجازت نہیں دیں گی کہ وہ داخلی انتخابات میں کامیابی کے لیے فلسطینی عوام کو ایک ہتھکنڈے کے طور پر استعمال کریں۔

جہاد اسلامی فلسطین کے سینیئر رکن نے صیہونیوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ تحریک مزاحمت پوری قوت کے ساتھ دشمن کی جارحیت کا جواب دے گی اور فلسطین کے عوام ہر گز سرتسلیم خم نہیں کریں گے۔

دوسری جانب اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے ترجمان نے کہا ہے فلسطینیوں کے غم و غصے کی آگ ایک دن غاصبوں کو جلا کر راکھ کر دے گی۔

حماس کے ایک ترجمان عبدالطیف القانوع کا کہنا تھا کہ اگر اسرائیل نے غزہ کا محاصرہ ختم اور دہشت گردانہ اور مجرمانہ اقدامات کا سلسلہ بند نہ کیا تو اسے فلسطینیوں کے شدید غیظ و غضب کا سامنا کرنا پڑے گا۔

انہوں نے کہا کہ صیہونی حکومت عالمی اداروں کی خاموشی اور امریکی حمایت کی چھتری تلے، فلسطینی عوام اور انقلابی نوجوانوں کے خلاف منظم جرائم کا ارتکاب کر رہی ہے۔

حماس کے ترجمان نے مزید کہا کہ اسرائیل کے حالیہ مجرمانہ اقدامات سے فلسطینیوں کے خلاف اس کی وحشیانہ اور غیر انسانی سوچ کی نشاندہی ہوتی ہے۔القانوع نے واضح کیا کہ عالمی برداری کی خاموشی اور ناتوانی کی وجہ سے اسرائیل کو غزہ کا محاصرہ جاری رکھنے اور فلسطینیوں کے خلاف جنگی جرائم کے ارتکاب کا سلسلہ جاری رکھنے کی شہہ مل رہی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ صیہونی حکومت کے وزیر اعظم بن یامین نیتن یاھو نے غزہ پر بھرپور فوجی حملے کی دھمکی دی ہے۔یہ دھمکی ایسے وقت میں دی گئی ہے جب اتوار کے روز صیہونی فوجیوں نے شمالی غزہ پر حملہ کرکے پانچ فلسطینی نوجوانوں کو شہید کردیا ہے۔

پچھلے چند ماہ کے دوران اسرائیلی فوج نے جنگی طیاروں، ہیلی کاپٹروں، ڈرون طیاروں، اور توپ خانوں کے ذریعے بارہا غزہ کو جارحیت کا نشانہ بنایا ہے۔

اسرائیل نے سن دوہزار سترہ سے غزہ کے خلاف جارحیت کا نیا سلسلہ شروع کیا تھا جس کے نتیجے میں اب تک ہزاروں فلسطینی شہید اور زخمی ہوچکے ہیں۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close