پاکستان

حق نواز جھنگوی کے روحانی فرزند نے معصوم بچی کو اپنی درندگی کا نشانہ بنا ڈالا

تکفیری مولوی قاری عرفان جھنگوی اپنے اجداد کی پیرو کرتے ہوئے مدرسہ سے فرار

شیعت نیوز : حق نواز جھنگوی کے روحانی فرذند نے مدرسے کی معصوم طالبہ کو جنسی درندگی کا نشانہ بنا ڈالا۔تکفیری مولوی قاری عرفان جھنگوی اپنے اجداد کی پیرو کرتے ہوئے مدرسہ سے فرار۔

یہ بھی پڑھیں :مولانا فضل الرحمٰن کی جماعت کا رہنما، جعلی امام مسجد بچی سے زیادتی کی کوشش میں گرفتار

اطلاعات کے مطابق جھنگ میں کالعدم سپاہ صحابہ کے قائد حق نواز جھنگوی کے روحانی فرذند قاری عرفان جھنگوی نے مدرسے کی 10 سالہ معصوم طالبہ کو اپنی درندگی کا نشانہ بنا ڈالا ۔زرائع کے مطابق پنجاب کے شہر جھنگ کے علاقے مدھانی جٹ چک نمبر 216 میں واقع تکفیری مدرسے کے درندہ صفت تکفیری مولوی قاری عرفان جھنگوی نے مدرسہ میں قرآن کریم کی تعلیم حاصل کرنے کے لئے آنے والی 10 سالہ معصوم طالبہ کو جنسی درندگی کا نشانہ بنانے کے بعد شدید زخمی حالت میں مدرسے کے عقب میں پھینک دیا۔

یہ بھی پڑھیں :تکفیری مدرسے میں سفاک مولویوں کی معصوم بچے سے جنسی زیادتی

پولیس کے مطابق مدھانی جٹ چک نمبر 216 کے رہائشی مزدور ممتاز کی معصوم بیٹی معمول کے مطابق مدرسے پہنچی تو دروازے پر پہلے سے موجود قاری عرفان جھنگوی اس کو مدرسے کے احاطے میں موجود اپنے کمرے میں لے گیا، جہاں اس نے معصوم بچی کے منہ میں اپنا رومال ٹھونس کر اسے اپنی درندگی کا نشانہ بنایا اور بچی کی حالت غیر ہوجانے پر اسے مدرسے کے عقب میں پڑے کچرے پر پھینک کر فرار ہوگیا۔اہل محلہ نے بچی کی آہ و بکا سن کر اس کو ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر اسپتال منتقل کیا۔

یہ بھی پڑھیں :مانسہرہ میں درندہ صفت تکفیری مولوی کی معصوم بچے سے سو سے زائد بار جنسی ذیادتی

علاقہ ایس ایچ او کے مطابق تکفیری قاری عرفان جھنگوی موقع سے فرار ہو چکا تھا، جس کی گرفتاری کے لئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close