کاپی رائٹ کی وجہ سے آپ یہ مواد کاپی نہیں کر سکتے۔
لبنان

سید حسن نصراللہ نے صدی کی ڈیل کو ’’صدی کا جرم ‘‘ قراردیدیا

شیعیت نیوز: حزب اللہ کے سیکریٹری جنرل سید حسن نصراللہ نے صدی کی ڈیل کو ’’صدی کا جرم ‘‘ قرارر دیتے ہوئے کہا کہ ہم پر امید ہیں کہ ہم اس خطے کے لوگ مل کر اس صدی کے جرم کو ناکام بنادیں گے۔

سید حسن نصراللہ کا کہنا تھا کہ یمن جو مقاومت کا اہم حصہ ہے اس نے بھی صدی کی ڈیل کو مسترد کردیا ہے۔ آج لاکھوں کی تعداد میں یمنیوں کا مظلوم فلسطینیوں کے حق میں احتجاج اس بات کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ قدس کے دشمنوں کی گزشتہ 40 سالوں سے یہی کوشش رہی کہ قدس کا مسئلہ بھلا دیا جائے۔قدس کے دشمن قدس کے دن کو فرقہ وارانہ رنگ دینے میں ناکام رہے۔قدس کو آزاد کرنے والوں کے اخلاص نے ہر حصار کو ناکام بنادیا اورقدس کے آج کے مظاہرے پوری دنیا اور امریکہ کے لئے ایک مضبوط پیغام ہے۔

سید مقاومت کا کہنا تھا کہ آج اسرائیل شام، لبنان اور فلسطین میں موجود میزائلوں سے خوف زدہ ہے اور دعوی کر رہا ہے کہ عراق میں بھی مقاومت کے میزائل موجود ہیں۔

سید حسن نصراللہ کا کہنا تھا کہ اسرائیل 2019 میں پہلے سے کہیں زیادہ کمزور ہوچکا ہے ، جبکہ مقاومت پہلے سے کہیں زیادہ طاقتور بن چکی ہے۔ اسرائیل محور مقاومت کے ساتھ ابھی تک کسی بھی جنگ میں نتیجہ حاصل نہیں کر سکا۔ خصوصا وہ مقاومت کے میزائلوں کے سامنے عاجز ہے۔

سید مقاومت سید حسن نصراللہ نے قدس کی مناسبت سے اپنی تقریر میں کہا ہے کہ اگر ایران پر جنگ مسلط کی گئی تو اسرائیل اور آل سعود کو اس کا خمیازہ بھگتنا ہوگا۔
ان کا کہنا تھا کہ اس وقت ٹرمپ نے دنیا پر نفسیاتی جنگ مسلط کی ہوئی ہے، یہ وہی امریکہ ہے جس نے مشرق وسطی میں فوج بھی اور یہاں اسے شکست ہوئی۔ آج کاامریکہ وہ نہیں وے 20 سال پہلے تھا۔
ان کا کہنا تھا کہ اگر ایران پر جنگ مسلط کی گئی تو یہ آگ پورے علاقے میں پھیل جائے گی اور جو سب سے پہلے اس آگ کے لپیٹ میں آئے گا وہ اسرائیل اور آل سعود ہیں۔

سیدمقاومت کا کہنا تھا کہ خطے میں امریکی آلہ کار خود اپنی حفاظت نہیں کرسکتے وہ صدی کی ڈیل پر عملدرآمد کی بات کرتے ہیں۔ سعودی عرب جو یمن میں ناکام ہوچکا ہے اور شکست خوردہ ہے وہ ایران پر حملے کی بات کرتا ہے۔ پے در پے 3 مکہ کانفرنسیں آل سعود کی ناکامی اور شکست کا ثبوت ہیں۔

سید حسن نصراللہ نے اسرائیل کی کمزوری کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ اسرائیل میں قیادت کا فقدان ہے اور ان کو ہمیشہ امریکی مدد کی ضرورت ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close