مشرق وسطی

ادلب اور حلب میں دہشت گردوں کی ناک زمین پر رگڑ دی ہے۔ بشار اسد

شیعت نیوز: شام کے صدر بشار اسد نے کہا ہے کہ ادلب اور حلب کی آزادی کے لئے ہونے والے آپریشن نے دہشت گردوں کی ناک زمین پر رگڑ دی ہے۔

شام کے صدر بشار اسد نے پیر کے روز دہشت گردوں کے خلاف ملکی افواج کی کامیابیوں کی مناسبت سے ٹیلی ویژن پر اپنی نشری تقریر میں ان کامیابیوں کو شام میں دہشت گردی کے مکمل خاتمے کا پیش خیمہ قرار دیا۔

یہ بھی پڑھیں : شامی فوج نے حلب – دمشق ہائی وے کو اپنے کنٹرول میں لے لیا

انہوں اس بات پر زور دیا کہ ترکی کی جانب سے بلند ہونے والے شور شرابے پر کوئی توجہ دئے بغیر ادلب اور حلب میں دہشت گردوں کے خلاف فوج کا آپریشن جاری رہے گا۔

شامی فوج نے حالیہ چند ہفتوں میں ملک کے دو اہم صوبوں حلب اور ادلب میں دہشت گردوں کے خلاف بڑی کامیابیاں حاصل کی ہیں جس پر ترکی کی جانب سے خاصی ناراضگی دیکھنے میں آئی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ شام میں سرگرم دہشت گردوں میں ایک بڑی تعداد ترکی کے حمایت یافتہ دہشت گردوں کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : اسلام آباد پولیس کا لال مسجد کے اطراف گھیرا تنگ، آپریشن کی تیاریاں مکمل

شامی فوج نے اپنے تازہ ترین آپریشن میں حلب شہر اور اسکے مضافاتی علاقوں کو کئی برس کے بعد اتوار کی شب شام کے حلب علاقے میں شامی فوج نے سیکورٹی کی بحالی کا اعلان کیا تو لوگ خوشیاں منانے سڑکوں پر نکل آئے۔ برسوں سے دہشت گردوں کی چنگل میں اسیر حلب کے باشندوں نے تکفیری دہشت گردوں کے خلاف شامی فوج کی جد و جہد اور جانفشانیوں کو سراہتے ہوئے اپنے ملکی نظام کی حمایت میں نعرے لگائے۔

واضح رہے کہ شام کا بحران دوہزار گیارہ میں شروع ہوا جس کے تحت ترکی، سعودی عرب، امریکہ اور اسکے اتحادیوں کے حمایت یافتہ تکفیری دہشت گرد گروہوں نے صیہونی حکومت کے حق میں خطے کے حالات کا رخ بدلنے کے لئے شام میں سرگرمیاں شروع کیں مگر شامی حکومت ایران اور روس کی مدد سے انہیں کنٹرول کرنے میں کامیاب رہی۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close