مقبوضہ فلسطین

بین الاقوامی عدالت انصاف کو دھمکی امریکہ کی کھلی غنڈہ گردی ہے۔ حماس

شیعت نیوز: اسلامی تحریک مزاحمت ’’حماس‘‘ نے امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کی جانب سے بین الاقوامی عدالت انصاف کو دھمکیاں دینے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

رپورٹ کے مطابق حماس کے ترجمان  حازم قاسم نے امریکی وزیر خارجہ کے اس بیان کو امریکہ کی کھلی غنڈہ گردی قرار دیا جس میں انہوں نے فلسطینیوں کے خلاف اسرائیلی ریاست کے جنگی جرائم کی تحقیقات کے اعلان پر بین الاقوامی عدالت پر کڑی تنقید کی تھی۔

ترجمان نے کہا کہ بین الاقوامی فوج داری عدالت کی طرف سے فلسطینیوں‌کے خلاف اسرائیلی ریاست کے جرائم کی تحقیقات کھولنے کے اعلان پر امریکہ کی پریشانی واضح ہے۔

یہ بھی پڑھیں : بیت المقدس تاریخ کے آئینے میں (دوسری قسط)

انہوں نے کہا کہ امریکہ کسی صورت میں صیہونی ریاست کے جرائم کو بے نقاب نہیں کرنے دے رہا ہے۔ امریکہ کی طرف سے بین الاقوامی عدالت کوبلیک میل کرنا، دباؤ ڈالنا اور دھمکی آمیز رویہ اختیار کرنا امریکہ کی کھلی غنڈہ گردی ہے۔

قاسم کا کہنا تھا کہ امریکہ کی طرف سے اسرائیل کی وجہ سے عالمی عدالت کو تنقید کا نشانہ بنانا اس امر کا واضح ثبوت ہے کہ صیہونی ریاست فلسطینیوں کے خلاف سنگین نوعیت کے جنگی جرائم اور انسانیت کے خلاف جرائم کی مرتکب ہو رہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : بیت المقدس تاریخ کے آئینے میں (تیسری قسط)

انہوںنے امریکہ کی طرف سے غرب ادن پر اسرائیلی قبضے کی حمایت کو فلسطین پر براہ راست امریکی یلغار کے مترادف قرار دیا۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکی انتظامیہ فلسطینی قوم پرمظالم اور فلسطینی سرزمین پر اسرائیلی ریاست کے غاصبانہ قبضے میں مدد گار بن چکی ہے۔

واضح رہے کہ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے دھمکی دی تھی کہ اگر عالمی فوجداری عدالت نے غرب اردن اور غزہ میں اسرائیل کے جنگی جرائم کی تحقیقات کا آغاز کیا تو اسے سنگین نتائج کا سامنا کرنا پڑے گا۔

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کے جاری کردہ بیان میں دعوی کیا گیا ہے کہ اسرائیل کے خلاف جنگی جرائم کی تحقیقات غیر قانونی ہوں گی۔ پومپئو کے بیان میں آیا ہے کہ عالمی فوجداری عدالت کو سیاسی محرکات سے دور رہنا چاہیے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close