ایران

ایران دو وائرس کورونا اور پابندیوں کا شکار ہے، یورپی ممالک میں ایک ہی وائرس ہے۔ روحانی

شیعت نیوز: ایرانی صدر مملکت نے یورپی ممالک کو مخاطب قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم اس وقت دو وائرسوں سے دوچار ہیں ، کورونا وائرس اور ایک اور طویل مدتی پابندیاں، مگر آپ کے پاس صرف ایک ہی وائرس ہے۔

یہ بات حسن روحانی نے اتوار کے روز کورونا وائرس سے نمٹنے سے متعلق اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ ہم پابندیاں وائرس کا شکار تھے اور کورونا بھی اس میں اضافہ کیا گیا مگر ہمارے عوام کے دوسرے کے ساتھ کھڑے رہے ہیں۔

صدر روحانی نے کہا کہ اس بیماری کے سامنے ہماری صورتحال کچھ ممالک کی نسبت سے بہتر ہے۔

یہ بھی پڑھیں : امریکہ کی پابندیاں کورونا وائرس کو لگام دینے میں رکاوٹ ہیں۔ ایران

انہوں نے اسلامی جمہوریہ ایران اور بعض یورپی ممالک میں کورونا کی تقابلی رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان رپورٹوں میں ایران اور یورپ کی صورتحال کے مابین بہت ہی طویل فاصلہ موجود ہے مثال کے طور پر ، ہمارے ملک میں مرنے والوں کی تعداد 7 فیصد پر بہت کم تھی ، اور کچھ یورپی ممالک میں یہ 22 فیصد تھی۔

انہوں نے کہا کہ ایرانی عوام، طبی عملے، ٹیلی ویژن، مسلح افواج، سائبرسپیس اور فنکاروں نے اس صورتحال کی بہتری کے لئے بہت ہی کوشش کی۔

قابل ذکر ہے کہ ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف نے 12 مارچ کو اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کے نام ایک مراسلے میں کورونا وائرس کا مقابلہ کرنے کیلئے ایران کیخلاف امریکہ کی غیر قانونی اور یکطرفہ پابندیوں کے خاتمے کا مطالبہ کیا تھا۔

واضح رہے کہ اقوام متحدہ کے سربراہ نے گزشتہ ہفتے کے دوران اقوام متحدہ کی اعلی کونسل برائے انسانی حقوق کے بیان کی حمایت کرتے ہوئے کورونا وائرس سے متاثرہ تمام ممالک کے خلاف عائد پابندیوں کو اٹھانے کا مطالبہ کرتے ہوئے تمام ممالک سے کوویڈ-19 کی روک تھام میں ایران سے تعاون کرنے کی اپیل کی تھی۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close