دنیا

عراق: التاجی فوجی اڈے پر اپنے فوجیوں کی ہلاکت پر امریکہ کا رد عمل

شیعت نیوز: امریکی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ فوجی اڈے پر حملے کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔

رپورٹ کے مطابق امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپئو نے ٹوئیٹ کرتے ہوئے کل رات عراق میں امریکہ کے فوجی اڈے پر ہونے والے حملے پرسخت رد عمل ظاہر کیا ہے۔

یہ بھی پٹھیں : عراق میں التاجی فوجی اڈے پر راکٹ حملہ، 2 امریکی ایک برطانوی فوجی ہلاک

مائیک پومپئو نے کہا کہ برطانیہ کے وزیر خارجہ دومینیک راب سے اس سلسلے میں بات ہوئی ہے اور حملہ کرنے والوں کو جواب دینا ہوگا۔

ابھی تک کسی بھی گروہ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔

یہ بھی پڑھیں : عراقی عوام کو اغیار کے ڈکٹیشن کی ضرورت نہیں ۔ علی شمخانی

واضح رہے کہ کل رات عراق کے دارالحکومت بغداد کے شمال میں واقع التاجی فوجی اڈے پر جہاں امریکہ کے دہشت گرد فوجی تعینات ہیں 10 راکٹ داغے گئے۔ جس سے دو امریکی اور ایک برطانوی فوجی ہلاک اور 12 زخمی ہو گئے۔

یہ بھی پڑھیں : ایرانی ماہرین نے کورونا کا پتہ لگانے والا تھرمل کیمرہ تیار کر لیا

یاد رہے کہ 3 جنوری 2020 کو امریکی دہشت گردوں کے ہاتھوں ایران کی قدس فورس کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی اور عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشدالشعبی کے ڈپٹی کمانڈر ابومہدی المہندس کی شہادت کے بعد عراقیوں نے امریکی فورسز کے انخلا کا مطالبہ کیا اور عراقی پارلیمنٹ میں امریکی فوجیوں کے انخلا سے متعلق مسودہ قانون کی منظوری دی گئی۔

واضح رہے کہ تکفیری و صیہونی ٹولے داعش نے امریکہ اور بعض عرب ملکوں کی مدد سے دوہزار چودہ میں داعش پر حملہ کیا اور بڑی تیزی سے اس ملک کے کئی مغربی اور شمالی حصوں پرقبضہ جما کر وہاں لاتعداد انسانیت سوز جرائم کا ارتکاب کیا مگر سترہ نومبر دوہزار سترہ میں عراق نے ایران کی مدد سے تکفیری و صیہونی ٹولے داعش کو شکست دے کر ملک میں باضابطہ طور پر اس کے خاتمے کا اعلان کیا۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close