عراق

عراق دوسرے ممالک کے خلاف جارحیت کا اڈہ نہیں بنے گا۔ عراقی وزیرخارجہ

شیعت نیوز: عراق کے وزیر خارجہ محمد علی الحکیم نے کہا ہے کہ ان کا ملک کسی دوسرے ممالک کے خلاف جارحیت کا اڈہ نہیں بنے گا۔

عراق کے وزیر خارجہ محمد علی الحکیم نے میونخ کانفرنس کے موقع پر یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ جوزف پورل سے ملاقات میں تمام ممالک کی جانب سے عراق کے قومی اقتداراعلی کے احترام اور دوسرے ممالک کے خلاف جنگ کے میدان میں تبدیل ہونے کی بھرپور مخالفت کی ضرورت پر تاکید کی۔

یہ بھی پڑھیں : حزب اللہ عراق کی امریکہ سے انتقام لینے پر تاکید

عراق کے وزیر خارجہ نے کہا کہ علاقائی و عالمی ثبات اور معاہدوں کے لئے ملکوں کی کوششوں کی حمایت ایک ضرورت ہے ۔

عراقی وزیر خارجہ نے مطالبہ کیا کہ یورپی یونین نے عراق کی تعمیرنو کے لئے منعقد ہونے والی دوہزاراٹھارہ کویت کانفرنس میں جن ترقیاتی منصوبوں کا وعدہ کیا تھا ان پر عمل درآمد کرے۔

یہ بھی پڑھیں : عراق کےمختلف صوبوں میں داعشی دہشت گردوں کے خلاف نئی کارروائیاں

امریکہ نے تین جنوری دوہزار بیس کو عراق کے اقتداراعلی کی مخالفت کرتے ہوئے ایران کی سپاہ قدس کے کمانڈر شہید جنرل قاسم سلیمانی اور عراقی عوامی رضاکار فورس کے ڈپٹی کمانڈر ابومہدی المہندس کو ان کے چند ساتھیوں سمیت بغداد ایئرپورٹ کے باہر شہید کردیا تھا۔

عراق کے وزیراعظم ، صدر ، وزیرخارجہ اور پارلیمنٹ کے اسپیکر سمیت عراق کے تمام اعلی حکام ، مختلف مواقع پر اپنے ملک کو دیگر ممالک کے خلاف جارحیت کے اڈے میں تبدیل ہونے کی مخالفت کرتے رہے ہیں۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close