اہم ترین خبریںعراق

عراق: حشد الشعبی نے داعش کے 6 خطرناک دہشت گرد عناصر گرفتار کر لیے

شیعت نیوز : عراق کی عوامی رضا کار فورس حشد الشعبی نے دہشت گرد گروہ داعش کے ایک حملے کو ناکام بنا دیا۔ حشدالشعبی نے داعش کے چھے خطرناک دہشت گرد عناصر کو گرفتار کرلیا۔

عراق کی عوامی رضاکار فورس حشد الشعبی نے ایک بیان میں اعلان کیا ہے کہ موصل پر داعش دہشت گرد گروہ کا حملہ ناکام بنا دیا اور یہ دہشت گرد عناصر فرار ہونے پر مجبور ہو گئے۔

عراق میں داعش دہشت گرد گروہ کی شکست کے باوجود اس گروہ کے بعض دہشت گرد عناصر اس ملک کے مختلف علاقوں میں روپوش ہیں جو دہشت گردانہ کاروائیاں انجام دیتے رہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : کشمیریوں کی حمایت اور بھارتی مظالم کے خلاف آواز بلند کرنے پر شیعت نیوز کا فیس بک پیج بلاک

دو ہزار چودہ میں داعش دہشت گرد گروہ نے امریکہ اور اس کے مغربی و عرب اتحادیوں منجملہ سعودی عرب کی فوجی و مالی مدد و حمایت سے عراق پر حملہ کر کے اس ملک کے وسیع و عریض شمالی اور مغربی علاقوں پر قبضہ کر لیا تھا اور پھر وحشیانہ ترین جرائم کا ارتکاب کیا تھا جس کے بعد حکومت عراق نے دہشت گردوں کے خلاف مہم میں ایران سے باضابطہ طور پر مدد کی درخواست کی۔

عراقی فوج نے ایران کی فوجی مشاورت و مدد سے سترہ نومبر دو ہزار سترہ کو عراق کے صوبے الانبار کے شہر راوہ کو، جو اس دہشت گرد عناصر کا آخری اڈہ تھا ،آزاد کرا کر اس ملک میں داعش دہشت گرد گروہ کا عملی طور پر کام تمام کر دیا۔

دوسری جانب عراقی سرکاری افواج میں شامل عوامی مزاحمتی فورس حشد الشعبی کے ذیلی بریگیڈ سرایا السلام کے کمانڈر اور عراق میں موجود الصدر سیاسی گروہ کے سربراہ سید مقتدی الصدر نے معروف عراقی تجزیہ نگار و مصنف ہشام الہاشمی کو گھر کے دروازے پر شہید کر دیئے جانے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے ٹوئٹر پر جاری ہونے والے اپنے ایک پیغام میں لکھا ہے کہ برادر شہید ہشام الہاشمی کی بہیمانہ ٹارگٹ کلنگ قانونی کارروائی سے محروم نہیں رہ جانی چاہئے۔

سید مقتدی الصدر نے عالمی طاقتوں کی جانب سے عراق کے اندر ناامنی اور پرتشدد کارروائیوں کے دوبارہ سے پھیلائے جانے کے بارے اپنے پیغام میں خبردار کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ملک کو تشدد کے بھنور میں پھنسائے جانے کے بارے خبردار کرتا ہوں کیونکہ عراق کو امن و امان کی ضرورت ہے۔

انہوں نے اپنے پیغام میں عراق کے اندر کارفرما خفیہ ہاتھوں کو مخاطب کرتے ہوئے تاکید کی کہ وہ جان لیں کہ ہشام الہاشمی کی ٹارگٹ کلنگ کے ذریعے حق کی آواز کو دبایا نہیں جا سکتا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close