اہم ترین خبریںعراق

عراق: صوبہ دیالہ میں داعش کا حملہ ناکام، حشد الشعبی کا ایک جوان شہید

شیعت نیوز: عراق کی عوامی رضا کار فورس حشد الشعبی نے جمعے کی شب صوبہ دیالہ میں دہشت گرد گروہ داعش کے ایک حملے کو ناکام بنا دیا۔

رپورٹ کے مطابق حشد الشعبی نے اعلان کیا ہے کہ اُس نے صوبہ دیالہ کے خانقین علاقے میں حشد الشعبی کے بریگیڈ 23 نے داعش کے حملے کو ناکام بنا کر دہشت گردوں کو فرار ہونے پر مجبور کر دیا۔

درایں اثناء عراق کے سکیورٹی ذرائع نے کہا ہے کہ جمعے کے روز صوبہ دیالہ کے المقدادیہ علاقے میں داعش کےحملے میں حشد الشعبی کا ایک جوان شہید ہو گیا۔

عراق میں داعش کی شکست کے باوجود اس دہشت گرد گروہ کے باقی بچے عناصر مختلف علاقوں میں روپوش ہیں اور وہ گاہے بگاہے عراقی عوام اور سیکورٹی اہلکاروں کو اپنے حملوں کا نشانہ بناتے رہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : بن سلمان نے پاکستان میں فرقہ واریت پھیلانے کا نیا ٹاسک تحریک لبیک کو دے دیا

عراق میں داعش دہشت گرد گروہ کی شکست کے باوجود اب بھی اس دہشت گرد گروہ کے کچھ عناصر ملک کے مختلف علاقوں میں چھپے ہوئے ہیں اور موقع ملنے پر دہشت گردانہ کارروائیاں کرتے رہتے ہیں ۔عراقی فوج اور رضاکار فورس حشد الشعبی نے ملک کے مختلف علاقوں کو دہشت گردوں کے وجود سے پاک کرنے کے لئے اب تک مختلف کارروائیاں انجام دی ہیں جن کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔

دوسری جانب عراق کی وزارت خارجہ نے شمالی عراق پر ترکی کے جنگی طیاروں کے حملے کے خلاف احتجاج کے طور پر ایک بار پھر ترکی کے سفیر کو طلب کر لیا۔

رپورٹ کے مطابق عراق کی وزارت خارجہ نے جمعرات کے روز ایک بیان میں شمالی عراق پر ایک بار پھر ترکی کے حملے کی مذمت کرتے ہوئے انقرہ کے اس اقدام کو عراق کے اقتدار اعلی کی توہین قرار دیا ہے۔

عراق نے ترکی کے سفیر فاتح ییلدیز کو وزارت خارجہ طلب کرکے انھیں ایک احتجاجی یادداشت دی ہے جس میں حکومت ترکی سے کہا گیا ہے کہ وہ اشتعال انگیز اقدامات اور عراق کے قومی اقتدار اعلی کی خلاف ورزی کرنے سے باز آجائے۔

اس سے قبل بھی عراق نے ترکی کے سفیر کو شمالی عراق پر کئے جانے والے حملے کے سلسلے میں سخت خبردار اور ترکی کے اقدام کو اچھی ہمسائیگی اور دو طرفہ دوستی کے اصول اور بین الاقوامی قوانین کے منافی قرار دیا تھا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close