عراق

عراقی فورسز کی کارروائی، صوبہ دیالی میں 3 داعش دہشت گرد ہلاک

شیعت نیوز: عراق کی رضاکار فورس حشدالشعبی کے ایک اعلی اہلکار صادق الحسینی نے کہا ہے کہ عراقی فورسز نے صوبہ دیالی میں 3 داعش دہشت گرد ہلاک اور متعدد کو زخمی کردیا گيا ہے۔

صادق الحسینی نے کہا کہ عراقی فورسز نے حمرین علاقہ میں ایک کارروائی کے دوران 3 داعش دہشت گرد کو ہلاک کردیا ۔

بعقوبہ کے شمال مشرق میں 80 کلو میٹر دور نفتخانہ اور حمرین کے علاقوں میں داعش کے خلاف فوجی آپریشن کا آغاز کیا گيا ، اس کارروائی میں 3 داعش دہشت گرد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ اس علاقہ میں عراقی فورسز کی تعداد میں اضافہ کیا جارہا ہے۔ عراق میں داعش کے سر اٹھانے کے خطرات موجود ہیں کیونکہ امریکہ اس وقت بھی عراق میں اپنی اور داعش کی بقا کی تلاش و کوشش کررہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : عراق: حکومت کی تشکیل سے جاری بحران پرغلبہ پا لیں گے۔ مصطفیٰ الکاظمی

دوسری طرف عراق کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ بین الاقوامی قوانین کے تحت مسئلہ فلسطین کے منصفانہ راہ حل کے لئے علاقے میں استحکام کا قیام ضروری ہے۔

العالم کی رپورٹ کے مطابق عراق کے وزیر خارجہ محمد علی الحکیم نے ویڈیو کانفرنس کی شکل میں عرب لیگ کے وزرائے خارجہ کے تشکیل پانے والے اجلاس کو خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسئلہ فلسطین سے پیدا ہونے والا خطرہ، دنیا میں پھیلنے والے کورونا وائرس کے خطرے سے کم نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکی حمایت یافتہ غاصب صیہونی حکومت کے موقف کا مقصد، فلسطینیوں کے مسلمہ حقوق کو نظرانداز کرنا ہے۔

لبنانی وزیر خارجہ نے بھی کہا ہے کہ غرب اردن کے مقبوضہ علاقوں کو خود میں شامل کرنے کا اسرائیلی منصوبہ، بہت زیادہ خطرناک و المناک ہے۔

صیہونی حکومت کی جانب سے مقبوضہ علاقوں کو اسرائیل میں شامل کئے جانے کے منصوبے پر عرب لیگ کے وزرائے خارجہ نے، اپنا ایک اجلاس تشکیل دیا ہے۔

صیہونی حکام نے اعلان کیا ہے کہ اس منصوبے پر جولائی سے عمل درآمد شروع کر دیا جائے گا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close