اہم ترین خبریںمشرق وسطی

اسلامی تعاون تنظیم کا اہلیان القدس کی مدد جاری رکھنے کا مطالبہ

شیعت نیوز: اسلامی تعاون تنظیم نے عرب ممالک اور مسلم امہ پرزور دیا ہے کہ وہ مقبوضہ بیت المقدس کے فلسطینی باشندوں کی مالی، سیاسی، سفارتی اور اخلاقی مدد جاری رکھیں تاکہ القدس کے فلسطینی قبلہ اوّل کے دفاع کی اپنی جنگ لڑ سکیں۔

رپورٹ کے مطابق جدہ میں او آئی سی کے صدر دفتر سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ فلسطینی قوم کو ماضی کی نسبت کہیں زیادہ اسلامی یکجہتی کی ضرورت ہے۔ فلسطینی قوم کی مدد اس وقت تک جاری رکھی جائے جب تک وہ اپنے آئینی حقوق بالخصوص حق خود ارادایت حاصل نہیں کرلیتے۔

یہ بھی پڑھیں : بھارت کشمیریوں کو مکمل آزادی فراہم کرے۔ اسلامی تعاون تنظیم

بیان میں مسجد اقصیٰ میں 50 سال قبل آتش زدگی کے سانحے کی طرف توجہ دلاتے ہوئے کہا گیا ہے کہ مسلمانوں کے قبلہ اوّل کو آج بھی شدید خطرات لاحق ہیں۔ اسرائیلی ریاست سرکاری سرپرستی میں قبلہ اوّل کے خلاف سازشوں میں ملوث ہے۔ فلسطینی نمازیوں پر مسجد اقصیٰ کو بند کرنے اور یہودیوں کے لیے کھولنے کی مہم جاری ہے۔ اسرائیلی حکومت کی سرپرستی میں صیہونی آباد کار قبلہ اوّل کی بے حرمتی کے مرتکب ہو رہے ہیں۔

او آئی سی نے مسجد اقصیٰ کی بنیادوں تلے جاری کھدائیوں کو قبلہ اوّل کو کمزور کرنے کی گھناؤنی سازش قرار دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ اسرائیل بیت المقدس کا جغرافیائی اور آبادیاتی نقشہ تبدیل کرنے کے لیے فلسطینی آبادی پرعرصہ حیات تنگ کرنے کے ساتھ صیہونی آباد کاری کے منصوبوں کوآگے بڑھا رہا ہے۔ القدس میں اسرائیلی سرگرمیاں اقوام متحدہ کی قرارداداوں کی توہین ہے۔

اسلامی تعاون تنظیم کی طرف سے جاری بیان میں فلسطینی قوم کے حق خود ارادیت کی حمایت کا اعادہ کرنے کے ساتھ ساتھ اسرائیل پر زور دیا ہے کہ وہ چار جون 1967ء کی جنگ میں قبضے میں لیے گئے تمام علاقے خالی کردےتاکہ فلسطینی قوم اپنے لیے الگ اور خود مختار ریاست قائم کرنے کا حق حاصل کرے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close