Uncategorizedمقبوضہ فلسطین

اسماعیل ھنیہ کی علی لاریجانی اور علی اکبر ولایتی کی ٹیلیفون پرگفتگو

شیعت نیوز : اسلامی تحریک مزاحمت (حماس) کے سیاسی شعبے کے سربراہ اسماعیل ھنیہ نے ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکرعلی لاریجانی اور رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ علی خامنہ ای کے مشیر علی اکبر ولایتی کو الگ الگ ٹیلیفون کرکے ان کی عیادت کی۔

خیال رہے کہ علی اکبر ولایتی اور علی لاریجانی حال ہی میں کورونا کا شکار ہوگئے تھے جس کے بعد انہیں علاج کے لیے اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔

حماس کے دفتر سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ اسماعیل ھنیہ نے کورونا وبا کی وجہ سے ایران میں پیدا ہونے والے بحران پر ایرانی قیادت سے مکمل یکجہتی کا اظہار کیا اور امید ظاہر کی کہ ایران جلد ہی اس آزمائش سے باہر نکل آئے گا۔

یہ بھی پڑھیں : فلسطینی اسیروں کو کورونا ہوا تو اسرائیل ذمہ دار ہوگا۔ فلسطینی صدر

اسماعیل ھنیہ نے فلسطینی قوم کے لیے ایرانی حکومت اور ایرانی قوم کی دیرینہ خدمات کوشاندار خراج تحسین پیش کیا۔

دوسری جانب حماس کی سیاسی بیورو کے سربراہ اسماعیل ھنیہ نے فلسطینی وزیراعظم محمد اشتیہ کے ساتھ ٹیلی فون پر بات چیت کی اور ان کے ساتھ کورونا وائرس وبائی مرض کے مضمرات پر تبادلہ خیال کیا۔

اسماعیل ھنیہ نے اشتیہ کو بتایا کہ ’’ہم اس وبائی مرض کا مقابلہ کرنے کے لیے متحد ہیں‘‘ اور اس بات پر زور دیا کہ انکی تحریک بیرون ملک اور اپنے گھروں میں موجود فلسطینیوں کی حفاظت پر گہری تشویش ہے۔

حماس کے رہنما نے  حماس کے رہنما نے غزہ کی صورتحال کو واضح کرتے ہوئے اس وبا سے نمٹنے کے لئے فلسطینی کوششوں اور اس مشکل وقت میں کی  محاصرہ زدہ غزہ میں عوام کی مدد کے لیے  فلسطینی حکومت کی کوششوں کو سراہا۔

انہوں نے کسی بھی سیاسی اختلافات کے بغیر کورونا وائرس کے خلاف لڑنے پر اس بات پر زور دیا  ، انہوں نے اس بات کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ان کی تحریک اپنی عوام کے لیے ہر ممکن کوشش کرے گی۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close