مشرق وسطی

صیہونی ریاست اسرائیل کے خاتمے کا آغاز، دنیا بھر میں 100 سے زائد سفارتخانے بند

اسرائیلی حکومت نے سفارتخانوں کو بند کرتے ہوئے، سفارتی عملے کو تل ابیب واپس بلا لیا

شیعت نیوز :صیہونی ریاست اسرائیل کے دنیا بھر میں موجود 100 سے زائد سفارتخانے غیر معینہ مدت کے لئے بند۔دنیا بھر میں اسرائیلی سفارتخانوں کی اچانک اور غیر اعلانیہ بندش پرامریکہ اور سعودی عرب سمیت دنیا بھر میں یہودی آلہ کار حکمرانوں میں خوف ہراس پھیل گیا۔

اطلاعات کے مطابق عالمی دہشتگرد غاصب صیہونی ریاست اسرائیل نے امریکہ،برطانیہ،جرمنی سمیت سینکڑوں ملکوں میں موجود اپنے 100 سے زائد سفارتخانوں کو بند کرتے ہوئے اپنے سفارتی عملے کو تل ابیب واپس بلا لیا ہے۔زرائع کے مطابق اسرائیلی حکومت کی جانب سے گزشتہ رات واشنگٹن،لندن،استنبول سمیت دنیا بھر کے 100 سے زائد شہروں میں موجود اسرائیلی سفارت خانوں کو اچانک اور غیر اعلانیہ طور پر بند کرتے ہوئے ان سفارت خانوں میں موجود اپنے سفیروں اور دیگر سفارتی عملے کو چند گھنٹوں کی مہلت دیتے ہوئے تل ابیب واپس پہنچنے کے احکامات جاری کر دیئے۔اہم زرائع کا کہنا ہے کہ اسرائیل کی جانب سے چند گھنٹوں کے نوٹس پر اپنے 100 سے زائد اہم سفارت خانوں کی بندش اور ان میں موجود سفیروں کی تل ابیب طلبی انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔

یہ بھی پڑھیں :فلسطینی ڈرون طیاروں نے اسرائیلی لیڈروں کی نیندیں حرام کر دیں

اسرائیلی وزارت خارجہ کے ترجمان کی جانب سے دنیا کے درجنوں ممالک میں واقع اسرائیل کے 100 سے زائد سفارت خانوں کی بندش کو دو اہم اسرائیلی وزارتوں کے درمیان جھگڑے کی وجہ قرار دیا جا رہا ہے، جبکہ عالمی تجزیہ نگاروں کے مطابق کسی ایک ملک یا شہر میں سفارت خانہ بند ہونا وہ بھی اعلانیہ اور معینہ مدت کیلئے تو سمجھ آتا ہے لیکن،امریکہ،برطانیہ،ترکی،جرمنی سمیت اہم ممالک کے اہم ترین شہروں میں 100 سے زائد سفارت خانوں کی بندش کسی بڑی گڑبڑ کا پیش خیمہ ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close