مقبوضہ فلسطین

اسرائیل میں کورونا وائرس سے 14 ہلاکتیں، 66 کی حالت تشویشناک

شیعت نیوز : اسرائیلی وزارت صحت نے بتایا ہے کہ اسرائیل میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد بڑھ کر 3900 ہوگئی ہے جبکہ 14 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ متاثرین کی تعداد چار ہزار کے قریب پہنچ گئی ہے 66 کی حالت تشویشناک ہے۔ اسرائیلی محکمہ صحت کے مطابق 66 افراد صحت یاب ہوئے ہیں۔

صیہونی حکومت اسرائیل میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی روک تھام مقبوضہ شہروں میں لاک ڈاؤن کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے۔ حکومت کی طرف سے اسرائیلیوں کو خصوصی ہدایات دی گئی ہیں کہ وہ لاک ڈاؤن کے دوران گھروں سے باہر نہ نکلیں۔

اسرائیلی وزارت صحت کا کہنا ہے کہ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 405 افراد کورونا کا شکار ہوئے ہیں جس کے بعد متاثرین کی تعداد 39 سو تک جا پہنچی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : ترکی میں 10ہزارعازمین عمرہ قرنطینہ میں اور پاکستان میں عازمین عمرہ کورونا کےپھیلاؤمیں مصروف

دوسری جانب فلسطین میں انسانی حقوق کی تنظیموں نے خبر دار کیا ہے کہ اسرائیلی ریاست فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے علاقوں میں کورونا وائرس کے ملوث ہو سکتا ہے۔

انسانی حقوق کے گروپوں کا کہنا ہے کہ غرب اردن میں جگہ جگہ قائم کی گئی دیوار فاصل میں قائم کردہ داخلی راستوں کے ذریعے غرب اردن میں کورونا وباء پھیلا سکتا ہے۔

انسانی حقوق کی تنظیموں کا کہنا ہے کہ غرب اردن کے دو اہم علاقوں طولکرم اور قلقیلیہ میں کئی مقامات پر دیوار فاصل قائم ہے اور اس دیوار فاصل میں کئی مقامات پر سیکیورٹی کی آڑ میں کئی دروازے بنائے گئے ہیں۔ یہ شبہ موجود ہے کہ ان علاقوں میں کورونا وباء پھیلانے میں اسرائیل کا ہاتھ ہوسکتا ہے۔

انسانی حقوق کی تنظیموں اور انسداد صیہونی آباد کاری کےلیے کام کرنے والی کمیٹیوں نے کہا ہے کہ یہ ممکن ہے کہ اسرائیل دیوار فاصل میں بنائے گئے راستوں اور انٹری پوائنٹ کھول کر فلسطینی مزدوروں کو وہاں سے آمد ورفت کی اجازت دے۔ اس لیے فلسطینی اتھارٹی کی انتظامیہ کو ان مقامات پر کڑی نظر رکھنا ہو گی اور وہاں سے آمدو رفت کرنےوالے فلسطینیوں کا طبی معائنہ اور مشتبہ افراد کو قرنطینہ میں رکھنا ہوگا۔

فلسطین کے علاقے غرب اردن میں کورونا کے متاثرین کی تعداد بڑھ کر ایک سو ہو چکی ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close