مقبوضہ فلسطین

اسرائیل سے دوستی کرنے والے صیہونی قوتوں کے مُہرے ثابت ہوں گے۔ خالد مشعل

شیعت نیوز : اسلامی تحریک مزاحمت حماس کے سیاسی شعبے کے سابق سربراہ خالد مشعل نے کہا ہے کہ اسرائیل کے ساتھ دوستی کرنے والے عرب ممالک صیہونی طاغوتی قوتوں کے مہرے ثابت ہوں گے۔ اسرائیل انہیں اپنے مقاصد کے حصول کے لیے استعمال کرے گا اور وقت آنے پرانہیں تنہا چھوڑ دے گا۔

رپورٹ کے مطابق حماس رہنما نے کہا کہ اسرائیل کے ساتھ صیہونی ریاست کے ساتھ دوستی کے معاہدے کرنا بنیادی انسانی، اسلامی اور عرب روایات کے ساتھ اور مسلم امہ کی تزویراتی مفادات کے متصادم ہے۔

اسرائیل ان ممالک کو اپنے تزویراتی مقاصد کے لیے استعمال کرتے ہوئے ان میں بیداری پیدا ہونے سے روکنے کی ہرممکن کوشش کرے گا۔

یہ بھی پڑھیں : عراق، سعودی و اماراتی فنڈڈ داعشی دہشتگردوں نے ابراہیم ابن مالک اشتر ؒ کے مزار پر حملہ کردیا

خالد مشعل کا کہنا تھا کہ اسرائیل پورے خطے کے ممالک کو اپنے زیرنگیں کر کے انہیں اپنے مفادات کے لیے استعمال کرنا چاہتا ہے۔ اسرائیل کا اصل مقصد پورے خطے پر اپنی بالادستی قائم کرنا ہے۔

قطر کے دارالحکومت دوحہ میں ’’عالم اسلام اور مستقبل کے مواقع‘‘ کے عنوان سے منعقدہ ایک سیمینار سے خطاب میں خالد مشعل نے اسرائیل کے ساتھ دوستی کرنے والے ممالک کی قیادت کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اگر تم یہ سمجھتے ہو کہ اسرائیل کے ساتھ معاہدہ کر کے تم یہ سمجھتے ہو کہ صیہونیوں کی تمام ہمدردیاں تمہارے ساتھ ہوگئی ہیں۔ یہ تمہاری غلط فہمی ہے۔ تم صیہونی ریاست کے تیار کردہ نقشے پر رنگ بھرنے جا رہے ہو۔ صیہونی ریاست عرب ممالک میں بیداری کو روک کر اپنے مفادات کی تکمیل کے لیے استعمال کرے گا۔

خالد مشعل نے اسرائیل کے ساتھ دوستانہ معاہدوں کو فلسطینی قوم کی پیٹھ پر خنجر گھونپنے کے مترادف قرار دیا اور کہا کہ اسرائیل کے ساتھ دوستی کرنے والے ممالک فلسطینی قوم کی غموں کو نہیں سمجھ سکے۔ وہ صرف اپنے مادی مفادات اور اقتدار کا تحفظ حاصل کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ تاہم فلسطینی قوم عرب ۔ اسرائیل دوستی سے کمزور نہیں ہوں گے بلکہ فتح اور نصرت فلسطینی قوم کا مقدر ہوگی۔

خالد مشعل نے عرب ممالک میں جاری بحرانوں اور ان کے حل کے طریقہ کار پرتنقید کی اور کہا کہ عرب دنیا کو اپنے مسائل کے حل کے لیے مذاکرات کی راہ اپنانی چاہیے۔ خطے میں اسرائیل کے استعماری گھوڑے کی لگامیں پکڑنے والے مسلمانوں، عرب ممالک اور عالم اسلام کے خیر خواہ نہیں ہوسکتے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close