مقبوضہ فلسطین

اسرائیلی فوج کی طرف سے غزہ کی سرحد پر 532 خلاف ورزیاں

شیعت نیوز : فلسطین میں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے ایک گروپ کی طرف سے جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل نے رواں سال کی پہلی شش ماہی میں غزہ کی سرحد پر 532 خلاف ورزیوں کا ارتکاب کیا۔

المیزان مرکز برائے انسانی حقوق کی طرف سے جاری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اسرائیلی فوج کی طرف سے سنہ 1948ء اور غزہ کی سرحد پر رواں سال کے پہلے چھ ماہ کے دوران پانچ سو بتیس انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا ارتکاب کیا گیا۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اسرائیلی حکام غزہ کی پٹی میں پرامن مظاہرین کے خلاف طاقت کے استعمال کی پالیسی پرعمل پیرا ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اسرائیلی فوج کی طرف سے غزہ کی سرحدی خلاف ورزیوں کے نتیجے میں غزہ میں کسانوں کی فصلوں کو بھی بڑے پیمانے پر نقصان پہنچا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : فلسطینی اراضی پر صیہونی ریاست کی ڈاکہ زنی روکی جائے۔ اسلامی تعاون تنظیم

دوسری جانب اسرائیلی حکام نے منگل کے روز اریحا  کے شمال مغرب میں واقع عرب الملیحات کمیونٹی کے فلسطینی شہریوں کی نجی ملکیت 300 دونم اراضی پر قبضہ کرنے کے نوٹس جاری کیے۔

عرب الملیحات کے فلسطینی رہائشیوں نے کہا کہ انہوں نے زمین ضبط کرنے کے  نوٹس فلسطینی زمینوں پر بنائی گئی غیر قانونی صہیونی آبادکار بستی مییوووٹ یریہو سے تعلق رکھنے والے اسرائیلی آبادکاروں سے موصول ہوئے ۔

انہوں نے کہا کہ مییوووٹ یریہو کے آبادکاروں نے جون کے آغاز میں آبادکاری کو بڑھانے کے لیے زمینوں کو ہموار کرنا شروع کیا تھا لیکن سینکڑوں فلسطینیوں نے اسرائیلی بلڈوزروں کو منصوبے کو تکمیل تک پہنچانے سے روکنے کے لیے احتجاج کیا۔

اسرائیلی حکام اور آباد کاروں کی طرف سے تقریبا روزانہ عرب الملیحات کے فلسطینی باشندوں کو ہراساں اور بے گھر کرنے کی دھمکی دی جاتی ہے ، لیکن وہ دباؤ اور باقاعدگی سے زمینوں پر قبضہ اور گھروں کو مسمار کرنے کی مہموں کے باوجود اپنے گھروں اور زمینوں کو چھوڑنے سے انکار کرتے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close