لبنان

اسرائیلی جنگی کشتی کی لبنانی سمندری حدود کی خلاف ورزی

شیعت نیوز : لبنان کی فوج کا کہنا ہے کہ قدس کی غاصب اور جابر صیہونی حکومت کی جنگی کشتی نے لبنان کے سمندری حدود کی خلاف ورزی کی ہے۔

لبنان کی فوج نے آج بروز ہفتہ اعلان کیا کہ قدس کی غاصب اور جابر صیہونی حکومت کی جنگی کشتیوں  نے راس الناقورہ کے ساحلی علاقے میں گھس کر لبنان کے سمندری حدود کی خلاف ورزی کی۔

یہ بھی پڑھیں : معصوم بچوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والا کالعدم سپاہ صحابہ کے مدرسے کا قاری گرفتار

جمعرات کے روز بھی اسرائیل کے6 جنگی جہاز راس الناقورہ کے ساحلی علاقے میں داخل تھے۔

ایجنسی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ اسرائیلی دشمن فوج کی ایک جنگی کشتی نے صبح 4 بجے راس الناقورہ کے مقابل لبنانی علاقائی پانی کی حدود کی خلاف ورزی کی۔

یہ بھی پڑھیں : شمالی وزیرستان میں پاک فوج کا آپریشن، 4 جوان شہید،4 دہشت گرد ہلاک

یہ اقدام 13 منٹ تک جاری رہا اور اس دوران 280 میٹر کے قریب مسافت طے کی گئی۔ بعد ازاں دوپہر 12:58 پر اسی طرح کی ایک اور جنگی کشتی نے مذکورہ سمندری علاقے میں خلاف ورزی کا ارتکاب کیا۔ اس مرتبہ یہ خلاف ورزی 205 میٹر کے قریب مسافت کی تھی اور یہ دو منٹ تک جاری رہی۔

بیان میں مزید بتایا گیا کہ لبنان میں اقوام متحدہ کی عارضی فورسز کے ساتھ رابطہ کاری سے اس خلاف ورزی کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : سعودیہ، عرب امارات اور اسرائیل کے حساس مقامات کی فہرست تیار کر لی، سربراہ یمنی انٹیلیجنس

واضح رہے کہ 2006 میں اسرائیل اور لبنان کے مابین 33 روزہ جنگ کے خاتمے کے بعد اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے قرارداد1701 منظور کیا جس کی رو سے اسرائیل ، لبنان کے خلاف کسی بھی قسم کی کوئی کارروائی نہیں کر سکتا لیکن اسرائیل بدستور اس قسم کی قراردادوں کو پاوں تلے روندتے ہوئے لبنان کی فضائی، زمینی اور سمندری حدود کی خلاف ورزی کررہا ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close