مقبوضہ فلسطین

اسرائیلی پابندیوں کے باوجود دفاعِ قبلہ اوّل کی ذمہ داری نبھائیں گے۔ الشیخ سلھب

شیعت نیوز :القدس اوقاف کونسل کے چیئرمین اور ممتاز فلسطینی عالم دین الشیخ عبدالعظیم سلھب نے کہا ہےکہ مسجد اقصیٰ میں اذان اور نماز کی ادائیگی پرعائد کی گئی اسرائیلی پابندیوں کے باوجود قبلہ اوّل کے محافظ ہی مقدس مقام کی حفاظت کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ اسرائیل کورونا وائرس کو قبلہ اوّل کے خلاف اپنے مجرمانہ اور مذموم عزائم کی تکمیل کے لیے استعمال کررہے ہیں۔

عبدالعظیم سلھب کا کہنا تھا کہ مسجد اقصیٰ کے حوالے سے اسرائیلی ریاست کا تبدیل ہوتا طرز عمل فلسطینیوں کو مزید پرعزم طریقے سے قبلہ اوّل کےدفاع کی دعوت دیتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : صیہونی پولیس نے القدس میں چار فلسطینیوں کو حراست میں لے لیا۔

مسجد اقصیٰ کے محافظ اور سدنہ باقاعدگی کے ساتھ قبلہ اوّل کے دفاع اور مقدس مقام کی حفاظت کی ذمہ داری پوری کریں گے۔

خیال رہے کہ حال ہی میں اسرائیلی فوج نے مسجد اقصیٰ میں نماز اور اذان کی ادائیگی پرپابندی عائد کردی تھی۔ اسرائیلی فوج نے مسجد اقصیٰ میں نماز کے لیے آنے والے فلسطینیوں کو گرفتار کرنا شروع کیا تھا۔ قابض فوج نے الشیخ عبدالعظیم سلھب کو بھی حراست میں لیا تھا تاہم انہیں بعد ازاں رہا کردیا گیا۔

دوسری طرف یہودی شرپسندوں کی مسجد اقصیٰ کی بے حرمتی کا سلسلہ جاری ہے۔ گذشتہ روز اسرائیلی فوج اور پولیس کی فول پروف سیکیورٹی میں درجنوں صیہونی آباد کار مسجد اقصیٰ میں داخل ہوئے اور مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔

رپورٹ کےمطابق گذشتہ روز اسرائیلی فوج اور پولیس کی فول پروف سیکیورٹی میں درجنوں صیہونی آباد کاروں، یہودی طلباء اور اسرائیلی انٹیلی جنس حکام سمیت درجنوں یہودیوں نے مسجد اقصیٰ میں گھس کر بے حرمتی کی۔

صیہونی آباد کار الگ الگ گروپوں کی شکل میں قبلہ اوّل میں داخل ہوئے۔ صیہونی آباد کاروں کے ہمراہ مسجد اقصیٰ پر دھاوے بولنے والوں میں اسرائیلی اسپیشل فورسز کے اہلکار بھی شامل تھے جو سنہ 1967ء سے زیرقبضہ مراکشی دروازے کے راستے مسجد اقصیٰ میں داخل ہوتے اور مقدس مقام کی بے حرمتی کرتے رہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close