اہم ترین خبریںپاکستان

جیکب آباد،سندھ حکومت وپولیس کا متعصبانہ اقدام، عزاداروں پردہشتگردی کی دفعات عائد

آج پیشی کے مواقع پر آنیوالے گرفتار عزاداروں کےدو عزیزوں کو بھی احاطہ عدالت سے گرفتار کرلیا ۔

شیعت نیوز: سندھ حکومت اور سندھ پولیس نے شکارپور میں جلوس شہادت داماد رسول (ص) مولا علی علیہ السلام کو نکالنے کی پاداش جیکب آباد سے گرفتار عزاداروں کےخلاف انسداد دہشتگردی ایکٹ کے تحت دو ایف آئی آر درج کرلیں جبکہ آج پیشی کے مواقع پر آنیوالے گرفتار عزاداروں کےدو عزیزوں کو بھی احاطہ عدالت سے گرفتار کرلیا ۔

یہ بھی پڑھیں: سندھ پولیس کی پھرتیاں، مرحوم عزاداربھی جلوس یوم علی ؑحیدرآباد کی ایف آئی آرمیں نامزد

عدالت نے اگلی سماعت پیر کہ روز مقرر کردی ہے ۔ جبکہ سندھ حکومت نے اپنی شیعہ دشمنی میں اپنی تمام حدیں عبور کردیں ہیں اور کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی کے الزام میں گرفتار عزادروں پر انسداد دہشتگردی ایکٹ کے تحت پرچہ درج کیا ہے جس میں 30افراد گرفتار اور 109سے زائد کو مفرور قرار دیا گیا ہے ۔

یہ بھی پڑھیں: سماجی فاصلے کے خلاف ورزی پر گرفتار عزادار پولیس کیجانب سےسماجی فاصلے کی پامالی کے ساتھ عدالت میں پیش

ملت جعفریہ کہ ووٹوں سے اقتدار میں آنیوالی زرداری مافیا کھلم کھلا شیعہ دشمنی میں اتر آئی ہے اور اپنے اتحادی تکفیری دہشتگردوں اور ملا ڈیزل فضل الرحمن کو موازنے کے لیے جیکب آباد ، شہداء کوٹ اور شکارپور جیسے سرحدی شہروں میں ایسے میں داعش اور جمعیت علماء اسلام( ملا ڈیزل ) سے تعلق رکھنے والے پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا جارہاہے جنکی شیعہ و بریلوی مسلک سے دشمنی کسی سے چھپی نہیں ۔

یہ بھی پڑھیں: کراچی، 250سے زائد گرفتار عزادار عدالت سے باعزت بری، تمام کیسز ختم

جیکب آباد پولیس کا SSP بشیر احمد بروہی جو کہ تکفیری عقیدہ کا حامل ہے اسکا قریبی عزیز سکندر بروہی سانحہ شکارپور اور جیکب آباد بم دھماکوں کا ماسٹر مائنڈ تھا جو داعش سے مربوط نیٹ ورک چلاتا تھا لیکن کچھ عرصہ قبل حساس ادارواں کی کارروائی میں سندھ بلوچستان سرحد پر و اصل جہنم ہواتھا۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close