پاکستان

سال 2013-15ء میں 218 طالبان ہلاک ،521 گرفتار

آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی کی زیر صدارت سینٹرل پولیس آفس میں ایک اعلیٰ سطح اجلاس منعقد کیا گیا۔ اجلاس میں پولیس کے اقدامات اور پولیس کارکردگی کا تفصیلی جائزہ لیا گیا ۔ اجلاس میں بتا یا گیا کہ سندھ کے تمام اضلاع کے داخلی و خارجی راستوں پر نگرانی کے لیے پولیس تعیناتی یقینی بنائی گئی ہے جس کے لیے پولیس کو بلٹ پروف گاڑیاں بھی فراہم کی جائیں گی، اس حوالے سے پاکستان آرمی اور سندھ رینجر ز کے اجلاس کے بعد جامع پلان بھی تشکیل دیا گیا ہے ۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ لائوڈ اسپیکر کے غلط استعمال پر جنوری میں 6کیسز رپورٹ ہوئے جن میں 5کراچی میں اور ایک کیس حیدر آباد میں رپورٹ ہوا،2013ء سے 2015ء تک تحریک طالبان کے 218 دہشت گرد پولیس مقا بلے میں ہلاک ہوئے اور521گرفتار کیے گئے۔ سال 2014ء میں فرقہ وارانہ دہشت گردی کی وارداتوں میں ملوث 13 دہشت گرد ہلاک اور 122 ملزم گرفتار کیے جاچکے ہیں۔ پولیس رپورٹ میں بتا یا گیا کہ 2014ء سے 2015ء کے دوران 180 دہشت گرد ، 47 اغوا کار اور 613 ڈاکو اور اسٹریٹ کرمنلز ہلاک ہوئے جبکہ 341 دہشت گرد ، 198 اغوا کار ، 1 ہزار 186 ڈاکو اور اسٹریٹ کرمنلز گرفتار ہوئے ۔ اسی طرح مذ کو رہ دورانیے میں پولیس نے 655 کلو گرام آتش گیر مواد ، 23بم ، 16آر جی پی راکٹ ، 13خودکش جیکٹس ، 55 گرنیڈ ، 7تھری جی رائفل ، 374ایس ایم جی ، ایک کلا شنکوف ، 1 ہزار 68 رائفلیں ، شاٹ گن ، 1 ہزار 777 ریوالور برآمد کیے ۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close