مقبوضہ فلسطین

جہاد اسلامی کے رہنما رمضان عبداللہ شلح کی رحلت پر تعزیت کا سلسلہ جاری

شیعت نیوز : ایران، حزب اللہ اور اسی طرح حماس سمیت سبھی فلسطینی تنظیموں اور جماعتوں نے جہاد اسلامی فلسطین کے سابق سربراہ رمضان عبداللہ شلح کی رحلت پر گہرے رنج اور دکھ کے اظہار کے ساتھ ان کی تحریک جاری رکھنے پر زور دیا ہے۔

صدر ایران ڈاکٹر حسن روحانی نے جہاد اسلامی فلسطین کے رہنما رمضان عبداللہ کی رحلت پر فلسطینی عوام کو تعزیت پیش کی ہے۔

ڈاکٹر حسن روحانی نے فلسطینی عوام اور جہادی تنظیموں کو تعزیت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ فلسطینی کاز کے لیےرمضان عبداللہ شلح کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ صدر مملکت کا کہنا تھا کہ رمضان عبداللہ کی زندگی جہاد و استقامت کے میدان میں آئندہ آنے والی نسلوں کے لیے مشعل راہ بنی رہے گی۔

ڈاکٹر روحانی نے اپنے تعزیتی پیغام میں رمضان عبداللہ شلح کو صیہونی حکومت کے خلاف جد وجہد کے میدان میں صف اوّل کے مجاہدین میں شمار کیا اور کہا انہوں نے اپنی پوری زندگی مظلوم فلسطینی قوم اس کی امنگوں کے دفاع کے لیے وقف کردی تھی۔

یہ بھی پڑھیں : فلسطینی تنظیم جہاد اسلامی کے سابق سکریٹری جنرل رمضان عبداللہ شلح کا انتقال ہوگیا

ایرانی وزیر خارجہ ڈاکٹر محمد جواد ظریف نے جہاد اسلامی فلسطین کے رہنما رمضان عبداللہ کی رحلت پر اپنے گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے اپنی پوری زندگی فلسطینیوں کی نجات اور اسرائیل کے ناجائز قبضے سے بیت المقدس کی آزادی کے لیے وقف کردی تھی۔

ڈاکٹر محمد جواد ظریف نے کہا کہ رمضان عبداللہ نے اپنی پوری زندگی اسرائیل کے خلاف قومی مجاہدت میں بسر کی۔ انہوں نے کہا کہ رمضان عبداللہ انتہائی منسکر المزاج، دانشور، مفکر، روشن خیال اور مسلمانوں کے درمیان اتحاد کے زبردست حامی تھے اور علاقے کے حالات اور تبدیلیوں پر ان کی گہری نظر تھی اور وہ ایران کو فلسطین کے مظلوم عوام کا اہم ترین حامی سمجھتے تھے اور ایران کی ترقی و پیشرفت کے خواہاں تھے۔

حزب اللہ لبنان نے اپنے ایک پیغام میں فلسطینی تنظیم تحریک جہاد اسلامی کے سابق سیکریٹری جنرل ڈاکٹر رمضان عبداللہ شلح کے انتقال تعزيت اور تسلیت پیش کی ہے۔

حزب اللہ لبنان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ کل رات ہمارے عزیز دوست، بھائی، تحریک جہاد اسلامی کے عظیم کمانڈر اور مجاہد کا طویل علالت کے بعد انتقال ہوگیا۔ رمضان عبداللہ پختہ عزم اور ارادے کے انسان تھے جنھوں نے اسرائیل کے خلاف اسلامی مزاحمت کو مضبوط بنانے میں اہم کردار ادا کیا ، وہ فلسطین اور بیت المقدس کے عاشق تھے ، مرحوم نے فلسطین عوام کے اعلی اہداف تک پہنچنے کے سلسلے میں بڑی تلاش و کوشش کی اور آخر کار طویل علالت کے بعد اپنی جان جاں آفریں کے حوالے کردی ۔ ہم اس واقع پر فلسطینی عوام ، مرحوم کے اہلخانہ اور تمام فلسطینی مجاہدین کو تعزیت اور تسلیت پیش کرتے ہیں۔ اللہ تعالی مرحوم پر اپنی رحمت اور مغفرت نازل فرمائے۔

اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کی جانب سے جاری کیے جانے والے ایک بیان میں رمضان عبداللہ کو جہاد و استقامت کی عظیم شخصیت قرار دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ وہ صبر و استقامت کا نمونہ تھے اور آخری دم تک اسلام اور فلسطینی کاز کی سربلندی کے لیے کام کرتے رہے۔

فلسطینی اتھارٹی کے صدر محمود عباس، حماس کے سربراہ اسماعیل ہنیہ، الفتح تحریک اور بعض دوسری فلسطینی تنظیموں اور رہنماؤں نے بھی اپنے الگ الگ پیغامات میں جہاد اسلامی کے رہنما رمضان عبداللہ کی موت پر قوم کو تعزیت پیش کی ہے۔

فلسطینی صدر محمود عباس نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ ہم نےایک عظیم فلسطینی انسان کو کھو دیا ہے صدر عباس نے کہا کہ فلسطین کی آزادی اور فلسطینی عوام کی سرافرازی اور سربلندی کے سلسلے میں تحریک جہاد اسلامی کے سابق سربراہ مرحوم رمضان عبداللہ کی کوششوں کو ہمیشہ یاد رکھا جائےگا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close