اہم ترین خبریںدنیا

صادق شیرازی اسلام اور شیعیت کا کھلا دشمن ہےکلب جواد نقوی

شیعت نیوز:ہندوستان کے شہر لکھنؤ کے خطیب جمعہ حجۃ الاسلام والمسلمین سید کلب جواد نقوی نے عراق کے حالیہ فسادات کے پیچھے ایم آئی 6 کے ایجنٹوں کو قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ صادق شیرازی اسلام اور شیعت کا کھلا دشمن ہے اور اس کے داماد یاسر الحبیب نے عراق کے دینی مرجع آیت اللہ سیستانی کو قتل کرنے کی دھمکی دی ہے۔ لکھنؤ کے امام جمعہ نے کہا کہ اس وقت عراق کے حالات تشویش ناک ہیں اور نجق اشرف اور کربلائے معلی تک شرپسند عناصر اور دہشت گرد پہنچ چکے ہیں۔ حال ہی میں صادق شیرازی کے داماد یاسر الحبیب نے عراقی شرپسندوں اور دہشت گردوں کو خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ تم بغداد اور بصرہ میں کیوں مظہرے کررہے ہو؟ تمہیں کربلا اور نجف کار خ کرنا چاہیے اور آیت اللہ سیستانی کے گھر کو محاصرے میں لے لینا چاہیے ۔ حجۃ الاسلام والمسلمین سید کلب جواد نقوی نے کہا کہ صادق شیرازی کے داماد یاسرالحبیب نے مظاہرین کو نجف و کربلا کی بے حرمتی اور آیت اللہ سیستانی کے قتل پر اکسانے کی کوشش کی ہے ۔یاسرالحبیب صادق شیرازی کا داماد ہے اور ایم آئی ۶ کا ایجنٹ ہے جو لندن سے شیرازی گروپ کو چلارہاہے ۔
لکھنؤ کے امام جمعہ نے کہا کہ یاسرالحبیب کے اس بیان کے بعد ہزاروں دہشت گرد اور شر پسند عناصر نجف و کربلا کے گرد جمع ہوئے تاکہ مقدس مقامات کی بے حرمتی کرسکیں ۔مولانانے کہاکہ اس وقت نجف اشرف میں آیت اللہ سیستانی مد ظلہ کی جان کو بھی خطرہ لاحق ہے ،اللہ ان کی حفاظت فرمائے۔مولانانے کہاکہ صادق شیرازی اور ان کا داماد داماد یاسرالحبیب ایم آئی ۶ کے ایجنٹ ہیں ۔صادق شیرازی خود بھی آیت اللہ نہیں ہیں بلکہ ان کے مریدوں نے انہیں آیت للہ مشہور کررکھاہے ۔اس لئے اس گروہ سے عوام ہوشیار رہیں ۔مولانانے کہاکہ صادق شیرازی کے اتنے چینل چل رہے ہیں جتنے چینل خود ایرانی حکومت کے پاس نہیں ہیں ۔ان کے پاس بے انتہا پیسہ ہے جسے اسلام ،شیعت اور مرجعیت کے خلاف پوری دنیا میں استعمال کیا جارہاہے ۔ان کا لندن میں ایک پورا علاقہ ہے جہاں اسلام اور شیعیت کے خلاف سازشیں ہوتی ہیں۔
خطیب جمعہ نے ہندوستان میں موجود صادق شیرازی کے نمائندوں کی بھی سخت الفاظ میں مذمت کی اور کہاکہ ابھی چند دن پہلے کچھ مولویوں نے صادق شیرازی کے نمائندے کے ساتھ میٹنگ کی تھی اور بیان دیا تھاکہ وہ قوم میں اتحاد اور ملت کی ترقی کے لئے کام کریں گے اور علماء کا بڑا اجلاس انکی طرف سے منعقد کیا جائے گا ۔عوام کو اب سمجھ لینا چاہئے کہ یہ لوگ کون ہیں اور کس کے اشاروں پر کام کررہے ہیں ۔ہندوستان اور خاص طور پر لکھنؤ میں صادق شیرازی کے نمائندے بیشمار پیسے خرچ کررہے ہیں ۔مولویوں کو خریدا جارہاہے تاکہ ان کا حلقہ وسیع تر ہوسکے اور وہ شیعیت اور مرجعیت کے خلاف بڑے پیمانے پر کام کرسکیں ۔مولانانے کہاکہ اگر خداناخواستہ آیت اللہ سیستانی مد ظلہ پر ہلکی سی بھی آنچ آئی تو اس کے لئے یہاں کے مولوی بھی ذمہ دارہوں گے کیونکہ وہ شیرازیت کے نمائندوں کے ساتھ ملے ہوئے ہیں ۔عوام کو معلوم ہونا چاہئے کہ شیرازی ہندوستان میں بھی متحد ہورہے ہیں تاکہ یہاں بھی انتشار اور اختلاف پھیلایاجاسکے جیساکہ پہلے بھی آیت اللہ خامنہ ای مد ظلہ کے خلاف اس گروہ کے نمائندے نے بیان دیا تھا ۔اس لئے ان کے جلسوں کا بائیکاٹ ہونا ضروری ہے تاکہ انکی بڑھتی ہوئی طاقت کو ختم کیا جاسکے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close