اہم ترین خبریںپاکستان

کراچی دہشت گردی کے اصل محرکات سامنے لائے جائیں۔ علامہ نیاز نقوی

شیعت نیوز : وفاق المدارس الشیعہ پاکستان اور ملی یکجہتی کونسل کے مرکزی نائب صدر علامہ نیاز حسین نقوی نے کراچی سٹاک ایکسچینج پر حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے دہشت گردی کے اصل محرکات اور مقامی سہولت کار سامنے لانے کا مطالبہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کراچی طویل عرصہ تک دہشت گردی، اغواء برائے تاوان، بھتہ خوری، فرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ جیسے سنگین جرائم کا شکار رہا ہے، فوج اور رینجرز کی کارروائیوں کے باعث کسی حد تک امن و امان بحال ہوا ہے، جسے سبوتاژ کرنے کی سازش کی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : اپنے نانا کی لاش پر بیٹھے 3 سالہ ننھے کشمیری بچے کی تصویر نے دنیا کو ہلا کر رکھ دیا

لاہور میں طلباء سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ماضی کی سیاسی حکومتیں اپنی وقتی مصلحتوں کی خاطر ان جرائم کی پشت پناہی کرنے والے عناصر سے چشم پوشی کرتی رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی خفیہ ایجنسی ”را“ کی اس سے پہلے بھی شرانگیزیوں کے ثبوت تو ملتے رہے ہیں لیکن مقامی ایجنٹوں کے خلاف کوئی عبرتناک کارروائی نہیں ہوئی، جس کی وجہ سے جرائم کی بیخ کنی کی گئی ہو۔

یہ بھی پڑھیں : چینی حکومت کے بھارت کی سرحد پر تازہ دم فوجی دستے تعینات

علامہ نیاز نقوی نے کہا کہ کراچی پاکستان کی اقتصادی شہ رگ ِ حیات ہے۔ اس کا تحفظ پورے ملک کا تحفظ ہے۔ جبکہ ملک بھر کے مختلف حصوں کے شہری کراچی میں آباد ہیں، اس کی سکیورٹی کو یقینی بنایا جائے، 12 مئی کے سانحہ سمیت کراچی میں ہونیوالی دہشت گردی کے ذمہ داروں، سہولت کاروں کو بے نقاب کئے اور نمونہء عبرت بنائے بغیر حقیقی امن کی بحالی ممکن نہیں۔

کراچی کا امن کاروبار اور ملکی اقتصادی ترقی کی بنیادی شرط ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close