اہم ترین خبریںپاکستان

کوہاٹ کی 2انتہائی موثر شیعہ شخصیات کالعدم سپاہ صحابہ کے سفاک دہشت گردوں کی فائرنگ سے شہید

شیعیت نیوز: پاکستان میں سعودی نواز کالعدم تکفیری وہابی تنظیم سپاہ صحابہ /لشکر جھنگوی کے دہشت گردوں نے کوہاٹ میں منظم شیعہ نسل کا آغاز کردیا ہے۔ گزشتہ تین روز میں تین شیعہ عمائدین بہیمانہ قتل ، تین روز قبل کے ڈی اے کوہاٹ میں شیعہ دکاندار قیصرعباس اور آج بشیر میڈیکوز کوہاٹ میںانتہائی موثر شخصیات سید ارتضیٰ حسن اور سید علی حسن کالعدم سپاہ صحابہ /لشکر جھنگوی کے دہشت گردوں کی فائرنگ سے شہید ہوگئے۔ذرائع کے مطابق دونوں شہداء سادات گھرانوں سے تعلق رکھتے تھے اور پیر بھی تھے۔

تفصیلات کے مطابق ملک دشمن سعودی ، امریکی اور اسرائیلی خفیہ ایجنسیوں کی ایماء پر پاکستان کو غیر مستحکم کرنے اور شیعوں کو دیوار سے لگانے کیلئے کالعدم سپاہ صحابہ کے ٹارگٹ کلرز فعال ہوچکے ہیں۔ وفاقی ، صوبائی حکومت اور قانون نافذ کرنے والے ادارے خاموش تماشائی، ریاستی اداروں کی جانب سے کالعدم جماعتوں کی مکمل پشت پناہی جاری ۔ دن دہاڑے شیعہ افراد کو چن چن کر نشانہ بنایا جارہاہے بےحس حکمرانوں کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگ رہی۔

کوہاٹ میں پشاور چوک کے قریب واقع بشیر میڈیکوز کے اندر دو افراد کو ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا گیا۔ تفصیلات کے مطابق بشیر میڈیکوز میں سید ارتضیٰ حسن اور سید علی حسن موجود تھے کہ مسلح دہشتگردوں نے دکان کے اندر داخل ہوکر فائرنگ کی۔ انتہائی قریب سے ہونے والی فائرنگ کی زد میں آکر دونوں افراد سید ارتضی حسن اور سید علی حسن موقع پہ ہی شہید ہو گئے۔ دونوں افراد کا تعلق ہنگو کے علاقے ابراہیم زئی سے تھا۔ ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کے مطابق فائرنگ کا واقعہ میڈیکل سٹور کے اندر پیش آیا۔

دو نوں شہداء کے جسد ہائے خاکی کو پوسٹمارٹم کی غرض سے ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ دونوں جانب ابراہیم زئی قبائل میں اس سانحہ کے خلاف شدید غم و غصہ پایا جا رہا ہے۔ دہرے قتل کے اس سانحہ کے خلاف علاقہ مکینوں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے سڑک کو ہر قسم کی ٹریفک کیلئے بند کر دیا ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close