پاکستان

خیبرپختونخواہ اسمبلی کے اراکین کا تکفیری مولویوں کے خلاف بڑا اعلان

جنسی زیادتی میں ملوث سفاک تکفیری مولویوں کو نشان عبرت بنائے جانے کا فیصلہ

شیعت نیوز :خیبرپختونخواہ اسمبلی کی ذیلی پارلیمانی کمیٹی نے معصوم بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے والے سفاک تکفیری مولویوں کے خلاف سخت قانون بنانے اور سزاؤں پر فوری عملدرآمد کرائے جانے اور جنسی زیادتی میں ملوث سفاک تکفیری مولویوں کو نشان عبرت بنائے جانے کا فیصلہ۔

یہ بھی پڑھیں :مانسہرہ پولیس نے جنسی زیادتی کیس میں مفتی کفایت اللہ کیخلاف مقدمہ درج کرلیا

اطلاعات کے مطابق خیبرپختونخواہ اسمبلی کے اراکین نے پورے صوبے باالخصوص خیبرپختوانخواہ کی دینی درسگاہوں میں سفاک مولویوں کے ہاتھوں معصوم طلباء و طالبات کی آبرو ریزی میں بدترین اضافہ پر تشویو کا اظہار کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں :جامعہ عثمان بن عفان کے تکفیری ملاں نے ایک 10 سالہ یتیم بچی کو اپنی جنسی درندگی کا نشانہ بنا ڈالا

زرائع کے مطابق خیبرپختونخواہ اسمبلی کی ذیلی پارلیمانی کمیٹی کے اراکین نے معصوم بچوں کے ساتھ زیادتی کے مرتکب تکفیری مولویوں کو نشان عبرت بنانے کا مطالبہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں :مانسہرہ میں درندہ صفت تکفیری مولوی کی معصوم بچے سے سو سے زائد بار جنسی ذیادتی

اراکین اسمبلی نے کہا کہ قانون میں ایسی شق شامل کی جائیں کہ جن کی بنیاد پر جنسی زیادتی کے مرتکب سفاک درندوں کو دی جانے والی عمر قید کی سزاء میں کسی بھی قسم کی کوئی  سہولت فراہم نا کی جائے اور عمر قید کی سزاء کو مجرم کی طبعی موت تک معین کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں :مولانا فضل الرحمٰن کی جماعت کا رہنما، جعلی امام مسجد بچی سے زیادتی کی کوشش میں گرفتار

اسمبلی کی ذیلی پارلیمانی کمیٹی کے اراکین نے مطالبہ کیا کہ معصوم بچوں کیساتھ جنسی زیادتی کے مرتکب تکفیری مولویوں کو سرعام پھانسی دینے کےبجائے جیل میں دی جانے والی سزائے موت کی وڈیو بنا کر معاشرے میں اس کی تشہیر کی جائے ، تاکہ معاشرے میں موجود دیگرعناصر عبرت حاصل کریں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close