اہم ترین خبریںپاکستان کی اہم خبریں

پاکستانی بخشو ، سعودی عرب میں قید 20 پاکستانیوں کی جانیں نہیں بچاسکے

اس بات کا انکشاف وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نےقومی اسمبلی میں پیش کردہ تحریری جواب میں کیا ہے ۔

شیعت نیوز: پاکستان کی جانب سے مسلسل بخشو کا کردارادا کرنے کے باوجود سعودیہ عرب میں نام نہاد پاکستانی سفیر محمد بن سلمان پاکستانی قیدیوں کو کسی بھی قسم کا ریلیف فراہم کرنے میں ناکام نظر آرہاہے اور اس کے تمام تر وعدے ہوا ہوگئے ہیں۔

پاکستانی بخشو ، سعودی عرب قید میں 20پاکستانیوں کی جانیں نہیں بچاسکے، اس بات کا انکشاف وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نےقومی اسمبلی میں پیش کردہ تحریری جواب میں کیا ہے ۔

یہ بھی پڑھیں: ملی یکجہتی کونسل کے پلیٹ فارم سےشیعہ سنی علماومشائخ کا وفد قاسم سلیمانی کی تعزیت کیلئے ایران روانہ

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اپنے تحریری جواب میں قومی اسمبلی کو بتایا ہےکہ سعودی عرب میں ابھی بھی سزائے موت کے 27 پاکستانی قیدی ہیں۔ وزیر خارجہ کے تحریری جواب کے مطابق سال 2019ء میں 20 پاکستانیوں کو سعودی عرب میں پھانسی دی گئی۔

قومی اسمبلی میں جمع کرائے گئے تحریری جواب میں وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ شک کی بنیاد پر پھانسی دیے گئے قیدیوں کی تعداد کا تعین کرنا مشکل ہے۔

یہ بھی پڑھیں: قاسم سلیمانی کی شہادت اسلامی مزاحمتی محاذوں کی تقویت و وحدت کا باعث بن چکی ہے، پاکستان فلاح پارٹی

خیال رہے کہ جسٹس پراجیکٹ پاکستان کے مطابق دنیا بھر میں کے مختلف ممالک کی جیلوں میں قید پاکستانیوں کی تعداد 11 ہزار سے زائد ہے جبکہ 7 ہزار کے قریب صرف عرب ممالک میں قید ہیں۔

یاد رہے کہ سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے پچھلے سال دورہ پاکستا ن کے اختتام پر کہا تھا کہ وہ سعودی عرب میں قید پاکستانی قیدیوں کی رہائی کو اپنا فرض سمجھتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان کے دھشتگرد تکفیری اثاثے وزیر دفاع کی آغوش میں۔۔ کیا ایسے بنے گا محفوظ پاکستان ؟؟

یہاں تک کہ پاکستانی وزیر اعظم عمران خان اور پوری قوم کو بے وقوف بنانے کیلئے سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے خود کو سعودی عرب میں پاکستان کا نام نہاد سفیر بھی قراردے دیا تھا۔

سعودی ولی عہدکے اعلان کے بعد امید پیدا ہوئی تھی کہ سعودی عرب میں قید پاکستانیوں کی مشکلات میں کمی واقع ہو گی۔ لیکن سعودی ولی عہد کےتمام دعوےہواہوگئے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close