کاپی رائٹ کی وجہ سے آپ یہ مواد کاپی نہیں کر سکتے۔
پاکستان

دہشتگردی کے خطرے کے پیش نظریوم علی ؑپرلاہور میں 3 ہزار سے زائد اہلکار ڈیوٹی دیں گے

یوم شہادتِ حضرت علی علیہ السلام کے موقع پر دہشت گردی کے خطرے کے پیش نظر سکیورٹی پلان کو حتمی شکل دے دی گئی۔جلوس ہائے عزاکے دوران پولیس کے 3 ہزار سے زائد جوان اور افسران سکیورٹی ڈیوٹی پر موجود ہونگے

شیعت نیوز: یوم شہادتِ حضرت علی علیہ السلام کے موقع پر دہشت گردی کے خطرے کے پیش نظر سکیورٹی پلان کو حتمی شکل دے دی گئی۔جلوس ہائے عزاکے دوران پولیس کے 3 ہزار سے زائد جوان اور افسران سکیورٹی ڈیوٹی پر موجود ہونگے جبکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کیلئے رینجرز کے جوان بھی اسٹینڈ بائے ہونگے۔

داتا دربار دھماکہ کے بعد یومِ شہادتِ حضرت علی علیہ السلام کے موقع پر کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کیلئے سکیورٹی پلان کو حتمی شکل دیدی گئی ہے۔ یوم شہادت حضرت علی علیہ السلام کے موقع پر شہر میں امن و امان کی صورتحال کو برقرار رکھنے کیلئے لاہور پولیس کے 3 ہزار سے زائد جوان اور افسران سکیورٹی ڈیوٹی پر موجود ہونگے۔

مرکزی جلوس کے داخلی راستوں پر عزاداروں کی 3 مقامات پر جامہ تلاشی لی جائے گی۔ ایس ایس پی آپریشنز اسماعیل کھاڑک کے مطابق سیف سٹی اتھارٹی اور ضلعی انتظامیہ کے سی سی ٹی وی کیمروں سے تمام جلوسوں کی مانٹیرنگ کی جائے گی۔

لاہور پولیس کے مطابق کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے رینجرز کے جوان سٹینڈ بائے ہونگے جبکہ موبائل فون سروس کی بندش اور موٹر سائیکل پر ڈبل سواری پر پابندی کی تجویز بھی زیرِغور ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close